Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / چین اور ہانگ کانگ میں سمندری طوفان

چین اور ہانگ کانگ میں سمندری طوفان

چین میں 7 ، مکاو اور ہانگ کانگ میں 6 اموات ،تیز رفتار ہوائیں، موسلادھار بارش

بیجنگ ؍ ہانگ کانگ ۔ 23 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سمندری طوفان ہاٹو سے مکاو میں 5 افراد اور پڑوسی ہانگ کانگ میں ایک شخص فوت ہوگیا۔ پورے علاقہ میں تباہی پھیل گئی۔ مقامی ذرائع ابلاغ کے بموجب شدید سیلاب سے کاریں زیرآب آگئیں۔ مکاؤ سٹی کی سڑکوں پر لوگ تیرتے ہوئے نظر آرہے تھے۔ حکومت مکاو نے ایک شخص کی دیوار کے انہدام میں زخمی اور بعدازاں ہلاک ہوجانے کی اطلاع دی۔ دیگر دو افراد کی اموات کی تفصیلات فوری طور پر دستیاب نہیں ہوسکیں۔ اس علاقہ کو کئی سیاح آیا کرتے ہیں۔ جن کی ایک کثیر تعداد بڑے سیاحتی مراکز اور جوے خانوں میں پھنس گئے۔ فضائی، زمینی اور بحری سفر منسوخ کردیئے گئے ہیں۔ اس لئے کئی افراد روانگی سے قاصر ہیں۔ آج دوپہر برقی سربراہی کا سلسلہ منقطع تھا۔ جوے خانوں اور ریسٹورنٹس حرکت میں آ گئے۔ مقامی شہریوں میں سماجی ذرائع ابلاغ پر بڑے پیمانے پر برقی سربراہی اور موبائیل فون نیٹ ورک کا سلسلہ منقطع ہوجانے کی شکایت کی۔ طوفان کے ساتھ تیز رفتار ہوائیں اور موسلادھار بارش سے ہانگ کانگ میں ایک 83 سالہ شخص سمندر میں گر کر ہلاک ہوگیا۔ ماہرین موسمیات کے بموجب سمندری طوفان کے انتباہ کا اعلان کردیا گیا ہے۔

گذشتہ 20 سال کا یہ ہانگ کانگ میں تیسرا شدید ترین طوفان ہے۔ بیجنگ سے موصولہ اطلاع کے بموجب چین میں جاریہ سال آنے والے طاقتور ترین سمندری طوفان شہر ژوہائی جنوبی صوبہ کوانگ ڈانگ سے ٹکرا گیا جس کی وجہ سے کم از کم 7 افراد ہلاک ہوگئے۔ آٹو جاریہ سال چین سے ٹکرانے والا تیرہواں طوفان ہے جس کی وجہ سے آج دوپہر زمین کھسکنے کے واقعات پیش آئے۔ 45 میٹر فی سیکنڈ کی رفتار سے تیز ہوا چل رہی تھی۔ قریبی علاقوں میں موسلادھار بارش ہورہی ہے۔ سمندری طوفان مکاو سے گذر چکا ہے ۔ جس کی وجہ سے تیز رفتار ہوائیں چلی، جن سے ایک شخص کی ہلاکت واقع ہوگئی۔ ایک اور شخص گیارہ منزلہ عمارت کے ملبہ میں دب کر ہلاک ہوگیا۔ تیسرا شخص لاری کی ٹکر سے لاک ہوگا۔ سرکاری خبر رساں ادارہ ژنہوا کی اطلاع کے بموجب محکمہ صحت کے عہدیداروں نے کہا کہ گوانگ ڈانگ میں چار افراد ہلاک ہوگئے۔ ایک شخص لاپتہ ہے۔ حکومت نے 26 ہزار 817 افراد کو عارضی پناہ گاہوں میں منتقل کردیا ہے۔ 664 ہیکٹر اراضی پر کھیت تباہ ہوگئے ہیں۔ برقی سربراہی کو سخت نقصان پہنچا اور19 لاکھ 10 ہزار گھرانوں کو برقی سربراہی منقطع ہوگئی۔ زمین کھسکنے اور سیلاب کے باے میں عوام کو خبردار کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT