Thursday , October 19 2017
Home / جرائم و حادثات / ڈاکٹر ششی کمار نے خود پر گولی چلاکر خودکشی کرلی

ڈاکٹر ششی کمار نے خود پر گولی چلاکر خودکشی کرلی

تین ڈاکٹروں میں سنسنی خیز کا جھگڑے کا دردناک انجام…
ڈاکٹر ششی کمار نے خود پر گولی چلاکر خودکشی کرلی
ایک خاتون کے ہمراہ معین آباد فارم ہاؤز پہونچنے کے بعد انتہائی اقدام، بیوی کو شبہات
حیدرآباد 9 فروری (این ایس ایس) مادھاپور میں واقع ایک کارپوریٹر ہاسپٹل میں حصہ داری اور رقمی لین دین کے مسئلہ پر کل شام حمایت نگر کے پوش علاقہ میں دو ڈاکٹروں کی ایک دوسرے پر فائرنگ کا سنسنی خیز واقعہ انتہائی ڈرامائی موڑ اختیار کرگیا جب ایک حملہ آور ڈاکٹر ششی کمار نے ضلع رنگاریڈی کے معین آباد میں واقع ایک فارم ہاؤز میں خود پر گولی چلاتے ہوئے اپنی جان دے دی۔ پولیس کے مطابق گزشتہ روز ساتھی ڈاکٹر پر فائرنگ کے بعد خودکشی کرنے والے ڈاکٹر ششی کمار کے علاوہ ڈاکٹر ادے کمار اور ڈاکٹر سائی کمار نے دو سال قبل مادھاپور میں مشترکہ طور پر 100 بستروں پر مشتمل لاؤرل ہاسپٹل قائم کیا تھا۔ دواخانہ کا اس سال یکم جنوری کو بڑے پیمانے پر افتتاح بھی عمل میں آیا تھا لیکن ان میں چند مالی تنازعات پیدا ہوگئے تھے جنھیں حل کرنے کے لئے تینوں نے گزشتہ شام حمایت نگر میں ملاقات کی تھی۔ یہ تینوں واکس واگن گاڑی میں بیٹھ کر بات چیت کررہے تھے کہ تلخ مباحث کے درمیان ڈاکٹر ششی نے مبینہ طور پر ڈاکٹر اُدے پر فائرنگ کی اور گولی کان چھوتے ہوئے گزر گئی۔ واقعہ میں زخمی سائی کمار ازخود حیدر گوڑہ کے اپالو ہاسپٹل رجوع ہوئے تھے جہاں ان کی حالت مستحکم بتائی گئی ہے۔ اس سنسنی خیز واقعہ نے ایک اور ڈرامائی موڑ اُس وقت اختیار کرلیا جب ایک جواں سال خاتون چندراکلا نے منگل کی صبح نارائن گوڑہ پولیس اسٹیشن پہونچ کر بیان کیاکہ ڈاکٹر ششی کمار پیر کی شام اُس کی رہائش گاہ پہونچے تھے اور یہ کہتے ہوئے کہ وہ شدید اُلجھن اور ذہنی دباؤ کا شکار ہیں، اُنھیں معین آباد میں واقع فارم ہاؤز پہونچانے کی خواہش کی۔ جس پر ششی کلا نے ڈاکٹر ششی کو اپنی کار میں فارم ہاؤز پہونچایا اور واچ مین شنکریا کو ڈاکٹر ششی کا خیال رکھنے کی تاکید کرتے ہوئے اپنے گھر واپس ہوگئی۔ چندرا کلا نے یہ حیرت انگیز انکشاف کیاکہ تقریباً 10 بجے شب شنکریا نے اُنھیں کال کیا اور ڈاکٹر ششی نے ان (چندراکلا) سے تقریباً 10 منٹ تک بات چیت کی اور یہ کہتے ہوئے اچانک کنکشن منقطع کردیا کہ میں (ڈاکٹر ششی) خودکشی کررہا ہوں‘‘۔  جس کے فوری بعد چندرا کلا نے پولیس پنجہ گٹہ کو چوکس کیا اور پولیس کے ساتھ فارم ہاؤز پہونچی جہاں ششی کو مردہ حالت میں پایا۔ تاہم ڈاکٹر ششی کے ارکان خاندان نے چندرا کلا کے بیان اور خودکشی کے دعویٰ پر شک و شبہ کا اظہار کیا۔ ڈاکٹر ششی کی بیوی کرانتی نے الزام عائد کیاکہ ڈاکٹر اُدے اور ڈاکٹر سائی کمار نے (کرانتی) کے شوہر کو قتل کیا ہے۔ فائرنگ واقعہ میں واحد چشم دید گواہ ڈاکٹر سائی کو نارائن گوڑہ پولیس نے اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔ سائی نے کہاکہ صرف ڈاکٹر ششی نے ہی ڈاکٹر اُدے اور ان پر فائرنگ کی تھی۔ پی ٹی آئی کے مطابق ڈاکٹر ششی نے قبل ازیں کہا تھا کہ دواخانہ کے قیام میں اُنھوں نے 75 لاکھ روپئے کی سرمایہ کاری کی تھی لیکن ساتھیوں نے اُنھیں ہٹانے اور حصہ سے محروم کرنے کی سازش کی تھی۔ ڈاکٹر ششی نے لائسنس یافتہ پستول سے اپنے منہ میں گولی چلاتے ہوئے خودکشی کی۔ ڈاکٹر ششی نے یہ بھی دعویٰ کیا تھا کہ اُنھوں نے ڈاکٹر اُدے پر فائرنگ نہیں کی تھی اور ان کی خودکشی کے لئے اُدے اور سائی ہی ذمہ دار ہیں۔

TOPPOPULARRECENT