Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ڈبل بیڈ روم اسکیم کیلئے بیرونی قرضے

ڈبل بیڈ روم اسکیم کیلئے بیرونی قرضے

شہر میں بنیادی سہولتوں کو بہتر بنانے 60 ہزار کروڑ روپئے مطلوب
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز) : تلنگانہ حکومت نے اپنے دو باوقار پروگرامس آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر اور ڈبل بیڈ روم اسکیم پر عمل آوری کے لیے جس پر سال 2016-17 میں تقریبا تیس ہزار کروڑ روپئے کی لاگت آئے گی ۔ غیر ملکی مالیاتی اداروں خاص کر بین الاقوامی ایجنسیوں سے تازہ قرضے حاصل کرنے کا عمل شروع کیا ہے ۔ حکومت نے نئے سال میں صرف آبپاشی پراجکٹس کے لیے 25 ہزار کروڑ روپئے خرچ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے ۔ بجٹ میں یہ رقم مختص نہیں کی گئی ہے ۔ حکومت نے شروع میں یہ کہا تھا کہ وہ اس سال ہڈکو کے بشمول بنکس سے رقومات حاصل کرتے ہوئے ہاوزنگ اسکیم کے لیے دس ہزار کروڑ روپئے خرچ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے ۔ ریاستی محکمہ فینانس کے عہدیداروں نے اب یہ کہا ہے کہ حکومت نے ان دو باوقار پروگرامس پر عمل آوری کے لیے قرض حاصل کرنے بعض بین الاقوامی مالیاتی اداروں سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے ۔ برکس ( برازیل ، رشیا ، انڈیا ، چین ، ساوتھ افریقہ ) بینک سے حکومت رجوع ہوگی جس کا ہیڈکوارٹر چین کے مقام شنگھائی میں ہے ۔ مرکزی حکومت کے توسط سے تجویز برکس بنک کے حوالہ کی جاچکی ہے جس کے تحت جی ایچ ایم سی اور ایچ ایم ڈی اے میں انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ پراجکٹس بشمول ہائی ویز بلند عمارتوں کی تعمیر سیوریج و آبرسانی پراجکٹس پر عمل آوری کے لیے ساٹھ ہزار کروڑ روپئے کا قرض مانگا گیا ہے ۔ ورلڈ بنک اور ایشین ڈیولپمنٹ بنک سے بھی قرض حاصل کیا جائے گا ۔ اس سلسلہ میں کسی بھی تجویز کو چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ منظوری دیں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT