Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ڈرائیونگ لائسنس فیس میں بے تحاشہ اضافہ

ڈرائیونگ لائسنس فیس میں بے تحاشہ اضافہ

لائسنس کی تجدید بھی مہنگی ہوگی ، تجاویز کو مرکزی وزارت روڈ ٹرانسپورٹ کی منظوری
حیدرآباد ۔ 8 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : ڈرائیونگ لائسنس کا حصول مہنگا ہوجائے گا ۔ خانگی گاڑیوں کے زمرہ کے لیے ڈرائیونگ لائسنس موجودہ 320 روپئے کی بجائے آئندہ ایک ہزار دو سو روپئے میں حاصل ہوگا ۔ مرکزی حکومت ہر قسم کی گاڑیوں کے لیے ڈرائیونگ لائسنس کی اجرائی اور تجدید کے چارجس میں اضافہ کرنے والی ہے ۔ ڈرائیونگ سکھانے کی فیس بھی بڑھ جائے گی ۔ حکومت ڈرائیونگ اسکول کے لیے لائسنس کے اجراء اور تجدید کی فیس 2 ہزار 5 سو روپئے سے بڑھا کر 10 ہزار روپئے کرنے والی ہے ۔ مزید یہ کہ ریاستوں کو اختیار دیا جارہا ہے کہ وہ ڈرائیونگ ٹسٹ کے لیے زائد فیس وصول کریں ۔ مرکزی وزارت روڈ ٹرانسپورٹ وشاہراہیں مختلف زمروں کی گاڑیوں کے لیے ڈرائیونگ مسابقتی ٹسٹ کے انعقاد کے لیے علحدہ فیس وصول کرنے کے لیے 1989 کے سنٹرل موٹر وہیکلس قواعد میں ترمیمات کی تجویز رکھتی ہے ۔ فیس ڈھانچہ پر آخری مرتبہ نظر ثانی سال 2001-02 کے دوران کی گئی تھی ۔ جس کے تحت اب تک تمام گاڑیوں کے لیے ڈرائیونگ ٹسٹ کی فیس پچاس روپئے مقرر ہے ۔ مرکز اب ہر زمرہ کی گاڑی کے لیے ڈرائیونگ ٹسٹ فیس تین سو روپئے مقرر کرنے والی ہے اس طرح ٹو وہیلر اور فور وہیلر کے لیے جڑواں ٹسٹ ہوں گے اور جس کے لیے موجودہ پچاس روپئے کی بجائے 6 سو روپئے ادا کرنے ہوں گے ۔ قانون میں ترمیمات کے تحت اسمارٹ کارڈ ، ڈرائیونگ لائسنس جو اس وقت دو سو روپئے میں ملتا ہے چار سو روپئے میں حاصل ہوگا ۔ لرننگ لائسنس جو اس وقت ہر قسم کی گاڑی کے لیے تیس روپئے میں حاصل ہوتا ہے دو سو روپئے میں حاصل ہوگا ۔ لرننگ لائسنس ٹسٹ فیس کے طور پر 50 روپئے الگ سے وصول کئے جائیں گے ۔ تمام قسم کے اسمارٹ کارڈ اور غیر اسمارٹ کارڈ ڈرائیونگ لائسنس کی تجدید کی فیس 50 روپئے سے بڑھا کر دو سو روپئے کی جارہی ہے ۔ انٹرنیشنل ڈرائیونگ پرمٹ اب ایک ہزار روپئے میں ملے گا ۔ اس وقت یہ پرمٹ 5 سو روپئے میں حاصل ہورہا ہے ۔ رہائشی پتے وغیرہ اگر ڈرائیونگ لائسنس میں تبدیل کرانا ہو تو اس کے لیے دو سو روپئے ادا کرنے ہوں گے ۔ وزارت ٹرانسپورٹ و ہائی ویز نے ایس کے شرما کمیٹی کی سفارشات کی بنیاد پر پیش کی گئی تجاویز قبول کرلی گئی ہیں ۔ مسودہ قانون کے تحت ڈرائیونگ لائسنس ٹسٹ میں شفافیت کے لیے ٹکنالوجی کے استعمال کے لیے ریاستیں زائد فیس چارج کریں گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT