Tuesday , August 22 2017
Home / دنیا / ڈنمارک کے اسکول میں مسلمان طلباء کی نماز پرامتناع

ڈنمارک کے اسکول میں مسلمان طلباء کی نماز پرامتناع

کوپن ہیگن ۔ 16 جون (سیاست ڈاٹ کام) ڈنمارک کے شہر کوپن ہیگن میں ایک مقامی اسکول کی انتظامیہ نے تدریسی اوقات میں مسلمان طلباء طالبات کی نماز کی ادائیگی پرپابندی عائد کردی ہے، جس پر مسلمان طلباء میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ اسکول انتظامیہ نے نہ صرف طلباء کے نماز ادا کرنے پرپابندی لگائی ہے بلکہ طالبات کے حجاب اوڑھنے کی بھی سختی سے ممانعت کردی ہے۔ کوپن ہیگن کے کسی اسکول میں مسلمان طلباء طالبات پرنماز کی ادائی اور حجاب پرپابندی کا یہ پہلا واقعہ نہیں۔ اس سے قبل بھی ایک دوسرے ہائی اسکول نے مسلمان طلباء کو نماز اور حجاب سے روک دیا تھا۔ اسکول کی پرنسپل انگر مارگریٹ جنسن کا کہنا ہے کہ وقفے کے دوران مسلمان طلباء￿  اسکول کی راہ داریوں میں مصلے بچھا کر نماز پڑھنا شروع کردیتے ہیں جس سے دوسرے طلباء کی آمد ورفت میں خلل پیدا ہوتا ہے۔ اس لیے وقفے کے دوران اور تدریسی اوقات میں طلباء کو نماز کی ادائیگی کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ اسکول انتظامیہ کے اقدام پر طلباء سخت احتجاج کیا ہے۔ اسکول کی ایک مسلمان طالبہ نے ’فیس بک‘ پر پوسٹ بیان میں بتایا کہ میری ایک کلاس فیلو نے مجھے بتایا کہ اسکول کی پرنسپل نے ہمیں نماز کی ادائیگی سے روک دیا ہے۔ آج کے بعد ہم نماز کی ادائیگی سے محروم ہوجائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT