Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ڈگری سمسٹرس میں% 50 نمبرات کا حصول لازمی

ڈگری سمسٹرس میں% 50 نمبرات کا حصول لازمی

حیدرآباد ۔ /17 اگست (سیاست نیوز) محکمہ تعلیمات نے ڈگری میں 50% نمبرات کو لازمی کرنے کے بارے میں غور و فکر کررہی ہے اور اس بارے میں اعلیٰ سطح پر غور کیا جارہا ہے ۔ اگر اس پر عمل کیا گیا تو ڈگری کے بعد اعلیٰ جماعتوں میں داخلہ کیلئے 50% نمبرات کا حصول لازمی ہوگا ورنہ دوبارہ اس جماعت میں تعلیم حاصل کرنا پڑے گا اور طلباء کو دونوں سمسٹرس میں کم از کم 50% نمبرات حاصل کرنا ہوگا اور دونوں سمسٹرس میں 50% نمبرات سے کم حاصل کرنے والوں کو آگے کے سمٹسرس میں داخلہ سے روکدیا جائے گا ۔ اس قانون پر جاریہ سال سے ہی عمل آوری کیلئے عہدیداران اقدامات کررہے ہیں اور اس مناسبت سے اعلیٰ تعلیمی عہدیداران نے مختلف یونیورسٹیز کے وائس چانسلرس کے منعقدہ اجلاس میں مشورہ کیا ہے ۔ اور 2016-17 ء تعلیمی سال سے ڈگری میں سی بی سی ایس (چائیس بیسٹ کریڈٹ سسٹم) پر عمل آوری شروع کی گئی ہے اس طریقہ کار کے حصہ کے طور پر ہر سال دو سمسٹرس منعقد کئے جائیں گے ۔ فی الحقیقت ڈٹنشن طریقہ عمل ہی سی بی سی ایس کے بنیادی اصولوں میں سے ہے ۔ مگر عہدیداران نے پہلے برس مذکورہ طریقہ عمل کو اختیار نہیں کیا ۔ طلبہ کے مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے وسیع پیمانہ پر غور و فکر کے بعد مختلف تبدیلیوں کے ذریعہ عمل آوری کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے عمل درآمد نہیں کیا اور اس سے متعلق غور و فکر کرنے کے بعد عمل آوری کا فیصلہ کئے جانے کی اطلاع ہے ۔ اتنا ہی نہیں اس فیصلہ سے حکومت کو بھی آگاہ کئے جانے کی اطلاع ہے اور حکومت کی منظوری ملتے ہی اس ڈٹنشن طریقہ پر عمل آوری کا آغاز کیا جائے گا اور اس فیصلہ پر عمل آوری کے ذریعہ ڈگری سال دوم و سال سوم کے طلبہ پر کوئی اثر نہیں پڑے گا ۔ مگر فی الحال داخلہ حاصل کرنے والے طلبہ پر اثر انداز ہوگا اور اس ڈٹنشن طریقہ کار کے خلاف طلبہ ، اساتذہ اور کالج انتظامیہ زبردست آواز اٹھارہے ہیں اور اس طریقۂ کار پر عمل آوری کی وجہ سے طلبہ کو بے شمار مسائل کا سامنا کرنا پڑے گا ۔

 

TOPPOPULARRECENT