Saturday , July 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ڈگ وجئے سنگھ ’ کھوٹا سکہ ‘ ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ پر تنقیدیں مسترد

ڈگ وجئے سنگھ ’ کھوٹا سکہ ‘ ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ پر تنقیدیں مسترد

کانگریس لیڈر کو خود مدھیہ پردیش کے عوام نے مسترد کردیا ۔ چیف وہپ سدھاکر ریڈی و دوسروں کا بیان

حیدرآباد۔ 21 فروری (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے اے آئی سی سی قائد ڈگ وجئے سنگھ کی جانب سے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ پر کی گئی تنقیدوں کو مسترد کردیا اور کہا کہ ڈگ وجئے سنگھ کا حال ’’کھوٹے سکے‘‘ کی طرح ہے جو ’’اصلی سکے‘‘ سے زیادہ آواز کرتا ہے۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے چیف وہپ پی سدھاکر ریڈی اور ارکان مقننہ گنگا دھر گوڑ اور وویکانند نے ڈگ وجئے سنگھ کے بیانات کو حکومت اور ٹی آر ایس کی مقبولیت سے بوکھلاہٹ کا نتیجہ قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ عوامی تائید سے محروم ڈگ وجئے سنگھ جنہیں مدھیہ پردیش کے عوام نے مسترد کردیا، اب تلنگانہ میں کانگریس کے اقتدار کا خواب دیکھ رہے ہیں۔ ٹی آر ایس ارکان مقننہ نے کہا کہ ڈگ وجئے سنگھ کو یہ اندازہ نہیں کہ تلنگانہ کے عوام نے بھی کانگریس پارٹی مسترد کردیا ہے۔ آنے والے انتخابات میں کانگریس کا وجود خطرہ میں پڑ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی ایک طرف عوامی تائید سے محروم ہے اور دوسری طرف داخلی انتشار کا شکار ہے۔ سدھاکر ریڈی نے کہا کہ ڈگ وجئے سنگھ کو چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ پر تنقید کا کوئی حق نہیں، کیونکہ چندر شیکھر راؤ نے عوامی فلاح و بہبود کیلئے خود کو وقف کردیا ہے جس کا اعتراف تلنگانہ کے عوام کو ہے۔ انہوں نے ڈگ وجئے سنگھ کو چیلنج کیا کہ وہ اپنے الزامات کے حق میں کھلے مباحث کیلئے تیار ہوجائیں۔ ارکان مقننہ نے کہا کہ کانگریس دراصل تلنگانہ میں اپنی ساکھ بچانے کی کوشش کررہی ہے اور وہ حکومت کی فلاحی اور ترقیاتی اقدامات کے آگے ٹک نہیں پائے گی۔ سدھاکر ریڈی نے سوال کیا کہ ملک میں فلاحی اسکیمات کے سلسلے میں تلنگانہ ریاست کے سرفہرست ہونے سے کیا ڈگ وجئے سنگھ لاعلم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو برسوں میں ٹی آر ایس حکومت نے نہ صرف انتخابی وعدوں کی تکمیل کی بلکہ نئی فلاحی اسکیمات کا آغاز کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بے سہارا خواتین کے بارے میں کانگریس نے اپنے دور حکومت میں کوئی فکر نہیں کی، لیکن کے سی آر نے لاکھوں بے سہارا خواتین کیلئے پینشن کی اسکیم کا آغاز کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈگ وجئے سنگھ کو مواضعات میں پہنچ کر عوام سے بات کرنی چاہئے ناکہ حیدرآباد میں بیٹھ کر الزامات عائد کریں۔ ٹی آر ایس قائدین نے کہا کہ الزام تراشی کانگریس پارٹی کا شیوہ بن چکی ہے اور ان کے بیانات سے عوام متاثر ہونے والے نہیں۔ ٹی آر ایس نے 90% انتخابی وعدوں کی تکمیل کرلی ہے اور باقی وعدوں کی تکمیل آئندہ دو برسوں میں مکمل ہوجائے گی۔ ڈگ وجئے سنگھ پر تنقید کرتے ہوئے ٹی آر ایس قائدین نے کہا کہ مدھیہ پردیش کے عوام نے گزشتہ 15 برسوں سے کانگریس کو مسترد کردیا ہے اور ڈگ وجئے سنگھ پارٹی کو دوبارہ برسراقتدار لانے میں ناکام ہوچکے ہیں۔ وہ خود مدھیہ پردیش کے بجائے ملک کی دیگر ریاستوں کا دورہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام کی جانب سے مسترد کئے جانے کے باوجود ڈگ وجئے سنگھ کے ہوش ٹھکانے نہیں آئے۔ رکن اسمبلی وویکانند نے کہا کہ تلنگانہ تحریک کے دوران کے سی آر تلنگانہ کے ہر موضع کا دورہ کرچکے ہیں اور مسائل سے اچھی طرح واقف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پسماندہ اور کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے حکومت کے اقدامات مثالی ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT