Wednesday , September 27 2017
Home / ہندوستان / ڈھاکہ حملے میں ملوث تین دہشت گرد ذاکر نائک کے مداح

ڈھاکہ حملے میں ملوث تین دہشت گرد ذاکر نائک کے مداح

نئی دہلی۔16 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) تین دہشت گرد جو یکم جولائی کو ڈھاکہ میں دہشت گرد حملے میں ملوث تھے، اسلامی تحقیقی فائونڈیشن کے بانی ڈاکٹر ذاکر نائک کے مداح تھے۔ اس تنظیم کو حکومت نے ممنوع قرار دیا ہے۔ راجیہ سبھا کو آج اس کی اطلاع دی گئی۔ وزیر مملکت برائے داخلہ ہنس راج ادھیر نے ایک تحریری جواب میں کہا کہ تین دہشت گرد جو حملے میں ملوث تھے، مبینہ طور پر ذاکر نائک کے مداح تھے۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ دستیاب اطلاع کے بموجب حالانکہ اسلامک ریسرچ فائونڈیشن ایک تعلیمی و سماجی ادارہ ہے تاہم یہ دیگر سرگرمیوں میں بھی ملوث ہے۔ غیر ملکی چندہ باقاعدگی قانون کی بعض خلاف ورزیوں کو دیکھتے ہوئے اس ادارے کو پیشگی اجازت کے زمرے میں رکھا گیا ہے۔ حکومت نے کل فیصلہ کیا کہ اس این جی او کو جس کے سرپرست متنازعہ مبلغ اسلام ہیں، غیر قانونی قرار دیا جائے۔ چنانچہ انسداد دہشت گردی قانون کے تحت اس کی مبینہ دہشت گرد سرگرمیوں کی بناء پر 5 سال کے لئے اس پر امتناع عائد کیا گیا۔ یہ فیصلہ مرکزی کابینہ کے ایک اجلاس میں کیا گیا جس کی صدارت وزیراعظم نریندر مودی کررہے تھے۔ این جی او کو غیر قانونی قرار دینے کی منظوری مرکزی کابینہ نے لے لی یہ کام وزارت داخلہ کی تحقیقات کے بعد کیا گیا جس سے پتہ چلا کہ یہ این جی او پیس ٹی وی کے ساتھ مشکوک روابط رکھتی ہے۔ یہ ایک بین الاقوامی چینل ہے جس پر دہشت گردی کی تشہیر کا الزام ہے۔

TOPPOPULARRECENT