Saturday , July 22 2017
Home / Top Stories / ڈھاکہ میں خاتون اور لڑکے نے خودکو دھماکہ سے اڑالیا

ڈھاکہ میں خاتون اور لڑکے نے خودکو دھماکہ سے اڑالیا

تین منزلہ عمارت میں روپوش عسکریت پسندوں کے خلاف پولیس کارروائی کے دوران حملے
ڈھاکہ ۔ /24 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش پولیس نے دارالحکومت ڈھاکہ کی ایک تین منزلہ عمارت پر دھاوا کردیا جہاں انتہائی مسلح عسکریت پسند روپوش تھے ۔ انسداد دہشت گردی کے طاقتور فورسس کی جانب سے دھاوے کے آغاز کے ساتھ ہی ایک خاتون اور 20 سال سے کم عمر ایک لڑکے نے خود کو دھماکہ سے اڑالیا ۔ باور کیا جاتا ہے کہ اس عمارت میں روپوش عسکریت پسند اس اسلامی گروپ سے تعلق رکھتے تھے جس (گروپ) کو حالیہ کیفے حملے کیلئے مورد الزام ٹھہرایا جارہا ہے ۔ ڈھاکہ میٹرو پولیٹین پولیس (ڈی ایم پی) کے انسداد دہشت گردی یونٹ نے ڈھاکہ کے علاقہ اشکونا میں واقع اس عمارت کا آج صبح کی اولین ساعتوں میں محاصرہ کرلیا تھا ۔ بعد ازاں وہاں روپوش دہشت گردوں کو باہر نکلتے ہوئے خود کو حکام کے حوالے کرنے کی ہدایت کی گئی تھی ۔

پولیس نے اس عمارت میں زبردستی گھسنے کی کوشش نہیں کی کیونکہ وہاں روپوش عسکریت پسندوں کے پاس بھاری مقدار میں بارودی مواد تھا ۔انسداد دہشت گردی یونٹ کے ایک سینئر عہدیدار سوناور حسین نے کہا کہ ایک برقعہ پوش خاتون کسی لڑکے کے ساتھ باہر آئی اور خود کو دھماکہ سے اڑالیا ۔ ڈھاکہ کے پولیس کمشنر اسد الزماں میاں نے کہا کہ عسکریت پسندوں نے ہم سے لڑنے اور دستی گولے پھینکنے کی کوشش کی تھی اور بچنے کیلئے ہم پر فائرنگ بھی کی گئی ‘‘ ۔ ایک عہدیدار نے کہا کہ دھاوے میں مہلوک لڑکا نیو جماعت المجاہدین کے مفرور لیڈر کا بیٹا تھا اور مہلوک عورت اس تنظیم کے دوسرے سرغنہ کی بیوی تھی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT