Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / ڈیرہ سچا سودا تشدد میں مہلوکین کی تعداد 36 ، کئی سنٹرس مہر بند

ڈیرہ سچا سودا تشدد میں مہلوکین کی تعداد 36 ، کئی سنٹرس مہر بند

لاٹھیاں اور ہتھیار برآمد ،حکومت ہریانہ خودسپرد ہوگئی ہائی کورٹ کا ریمارک، کل سزا کا فیصلہ ہوگا
گاڈمین سے قیدی نمبر 1997
خود ساختہ گاڈ مین گرمیت رام رحیم سنگھ کو روہتک کی سناریا جیل میں رکھا گیا اور حکام کے بموجب ’ اپرول سیل ‘ میں 12 قیدیوں کی گنجائش ہے لیکن گرمیت کو تنہا رکھا گیا ہے اور اس کا قیدی نمبر 1997 ہے ۔ وہ کل نصف شب تک جیل کی کوٹھری میں ٹہلتا رہا ۔ یہاں آتے ہی پہلے اس نے بے چینی کی شکایت کی تھی لیکن ڈاکٹرس نے طبی معائنہ کے بعد اسے فٹ قرار دیا ۔ رات میں کھانے کے لیے اسے دو چپاتی ، دال اور اچار دیا گیا ۔۔

چندی گڑھ ۔ 26 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ڈیرہ سچا سودا سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ کو عصمت ریزی کے مقدمہ میں مجرم قرار دیئے جانے کے بعد پھوٹ پڑے تشدد میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر 36 ہوگئی ہے ۔ ہریانہ میں آج تازہ تشدد کی کوئی اطلاع نہیں ملی ۔ ریاستی حکام اس بات کی تیاری میں مصروف ہیں کہ پیر کو کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہ آئے ۔ جب کہ خصوصی سی بی آئی کورٹ جج روہتک کے سناریا میں واقع ڈسٹرکٹ جیل پہنچیں گے اور سزا کی نوعیت کا فیصلہ سنائیں گے ۔ ڈی جی پی بی ایس سندھو نے آج رات بتایا کہ جملہ 36 افراد ہلاک ہوئے ۔ سرسہ میں 6 اور مابقی ہلاکتیں پنچکولہ میں ہوئی ہیں ۔ پڑوسی ریاست پنجاب میں آج کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا ۔ سیکوریٹی فورسیس نے یہاں فلیگ مارچ کیا اور حساس علاقوں میں سیکوریٹی سخت کردی گئی ہے ۔ تشدد کو روکنے میں ناکامی پر تنقیدوں کا شکار ہریانہ حکومت نے ڈپٹی کمشنر پولیس پنچکولہ کو معطل کردیا ۔ اس کے علاوہ ریاست کے ڈپٹی ایڈوکیٹ جنرل گرداس سلوارا کو بھی خدمات سے بر طرف کردیا جو کل گرمیت رام رحیم سنگھ کو سزاء سنائے جانے کے بعد ان کے ہمراہ تھے ۔ منوہر لال کتھر حکومت کو پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ کی بھی سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا جس نے بدترین تشدد کے بارے میں کہا کہ حکومت نے ڈیرہ سچا سودا کے حامیوں کے آگے سیاسی ترجیحات کی بنا خود سپردگی اختیار کرلی ۔ اس دوران ہریانہ اور پنجاب میں آج سیکوریٹی عملہ نے ڈیرہ سنٹرس کے خلاف بڑے پیمانہ پر کارروائی شروع کی جہاں انہیں بھاری مقدار میں لاٹھیاں اور تیز دھاری اشیاء دستیاب ہوئی ۔ ہریانہ میں کئی ڈیرہ سنٹرس کو مہر بند اور سیکوریٹی عملہ تعینات کیا جارہا ہے ۔ حکومت ہریانہ نے کہا کہ ریاست میں امن بحال ہورہا ہے ۔ چیف سکریٹری ڈی ایس دھیسی نے ڈیرہ سربراہ کے ساتھ خصوصی سلوک روا رکھنے کی میڈیا کی اطلاعات کو غلط قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ عام قیدی ہیں ۔ 28 اگست کو سزا کا فیصلہ سنایا جانے والا ہے اور تمام سیکوریٹی انتظامات کرلیے گئے ہیں ۔جج اور دیگر قانونی ارکان عملہ کو ہیلی کاپٹر کے ذریعہ جیل لے جایا جائے گا ۔ ڈی جی پی نے بتایا کہ ڈیرہ کے ایک حامی کے پاس سے اے کے 47 رائفل اور ایک پستول برآمد ہوئی ۔ ایک اور گاڑی سے دو رائفل اور پانچ پستول برآمد ہوئے ۔ کل ہوئے تشدد کے سلسلہ میں اب تک 552 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ڈیرہ میں موجود افراد تیزی سے باہر آرہے ہیں ۔ حکومت ہریانہ نے تقریبا 30 ڈیرہ سنٹرس کو مہر بند کردیا جہاں 3 ہزار سے زائد لاٹھیاں ، ڈیزل اور پٹرول برآمد ہوا ۔ دہلی میں بھی کل تشدد کے بعد آج حالات معمول پر رہے ۔بی جے پی نے تشدد کے پیش نظر چیف منسٹر ہریانہ منوہر لال کتھر کی برطرفی کا امکان مسترد کردیا ۔ بی جے پی جنرل سکریٹری انیل جین نے کہا کہ حکومت نے صورتحال پر بروقت قابو پالیا ۔۔

جنسی استحصال کو بے نقاب کرنے والے جرنلسٹ کے
ارکان خاندان کے لیے امید کی کرن
چندی گڑھ ۔ 26 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ڈیرہ سچا سودا سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ کی سی بی آئی عدالت کی جانب سے مجرم قرار دئیے جانے کے بعد سرسہ کے جرنلسٹ رام چندر چھترپتی کے ارکان خاندان کو امید کی کرن دکھائی دینے لگی ہے ۔ 15 سال قبل عصمت ریزی کے واقعات کا رام چندر نے مبینہ طور پر انکشاف کیا تھا اور اسے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا ۔ مہلوک صحافی کے بیٹے انشل نے عدالت کے فیصلہ کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ انصاف ملنے کی توقع ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سی بی آئی جج نے دباؤ میں آئے بغیر اپنا فیصلہ سناتے ہوئے یہ واضح اور کھلا پیام دیا ہے کہ دھوکہ باز گاڈمین آزاد نہیں گھوم سکتے ۔ اس فیصلہ سے عام آدمی کے عدلیہ پر بھروسہ میں اضافہ ہوا ہے ۔ رام چندر چھترپتی نے سرسہ میں واقع ڈیرہ ہیڈکوارٹر میں سادھوی کے جنسی استحصال کو بے نقاب کیا تھا اور انہیں 24 اکٹوبر 2002 کو مکان کے قریب گولی مار کر ہلاک کردیا گیا تھا ۔۔

گرمیت رام رحیم سنگھ نے بی جے پی کی کھل کر تائید کی
امیت شاہ نے بھی ملاقات کی تھی ، انتخابات سے قبل پارٹی کے 44 امیدواروں نے آشیرواد لیا
چندی گڑھ ۔ 26 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : عصمت ریزی کے مقدمہ میں مجرم قرار دئیے گئے ڈیرہ سچا سودا سربراہ رام رحیم سنگھ کی بی جے پی کو بھر پور تائید حاصل تھی ۔ انتخابات سے ایک ہفتہ قبل بی جے پی امیدواروں کو اطلاع ملی کہ ’ گروجی ‘ نے ملاقات کی درخواست قبول کرلی ۔ اس موقع کو غنیمت جانتے ہوئے 7 اکٹوبر کو 90 کے منجملہ 44 بی جے پی امیدواروں نے سرسہ میں واقع سنٹر پر گرمیت رام رحیم سنگھ سے 5 بجے شام ملاقات کی جو صرف 15 منٹ تک جاری رہی ۔ اس وقت گرو جی نے ان سب کو آشیرواد دیا ۔ اس ملاقات کے چند دن بعد تاریخ میں پہلی مرتبہ ڈیرہ نے بی جے پی کی تائید کا اعلان کیا ۔ حالانکہ گذشتہ 24 سال سے اس نے کسی بھی سیاسی جماعت کی تائید سے گریز کیا تھا ۔ یہی نہیں گرمیت نے 15 اکٹوبر کو پہلی مرتبہ حق رائے دہی سے بھی استفادہ کیا اور اپنی تصویر ٹوئیٹر پر اپ لوڈ کی ۔ بی جے پی کی تائید یقینی بنانے کے لیے 44 امیدواروں کی ملاقات سے چھ دن پہلے بی جے پی صدر امیت شاہ نے سرسہ ڈیرہ میں رام رحیم سنگھ سے ملاقات کی تھی ۔ اس وقت انہوں نے ہریانہ اور مہاراشٹرا انتخابات کے لیے آشیرواد طلب کی ۔ ڈیرہ کے ہریانہ میں 60 لاکھ اور مہاراشٹرا میں 25 لاکھ سے زائد حامی ہیں ۔۔

 

TOPPOPULARRECENT