Tuesday , July 25 2017
Home / شہر کی خبریں / ڈیلر اور چور بازاری کرنے والوں کا گٹھ جوڑ ختم کرنے اقدامات

ڈیلر اور چور بازاری کرنے والوں کا گٹھ جوڑ ختم کرنے اقدامات

سیول سپلائز کے اجناس کی کھلے بازاروں میں فروخت پر پی ڈی ایکٹ کے تحت کارروائی
حیدرآباد۔یکم۔مئی(سیاست نیوز) کالا بازاری کے خاتمہ کے لئے ریاست میں موجود ڈیلر اور چور بازاری کرنے والے کے درمیان گٹھ جوڑ کے خاتمہ کے لئے کالا بازاری کرنے والوں اور انہیں راشن فروخت کرنے والوں کے خلاف پی ڈی ایکٹ کے تحت کاروائی کے اقدامات کئے جائیں گے اور ان اقدامات کے ذریعہ محکمہ سیول سپلائزکے اجناس کو کھلے بازارو ںمیں فروخت پر روک لگائی جائے گی۔ محکمہ سیول سپلائز کی جانب سے ارزاں فروشی کی دکانات سے حاصل کئے جانے والے غذائی اجناس کی کالا بازاری کو روکنے کے لئے متعدد اقدامات کئے جا رہے ہیں جن میں ڈیلروں پر نظر رکھنے کے علاوہ محکمہ سیول سپلائزکے گوداموںسے نکلنے والی گاڑیوں پر نگاہ رکھنے کیلئے جی پی ایس سسٹم کی تنصیب عمل میں لائی گئی جس کے ذریعہ 1000 لاریوں پر نظر رکھی جا رہی ہے جو محکمہ سیول سپلائز کے گوداموں سے ڈیلرس تک اجناس پہنچانے کا کام انجام دیتے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ محکمہ سیول سپلائز کی اعانت سے ٹاسک فورس نے 75مقامات پر دھاوے کرتے ہوئے 150افراد کو گرفتار کیا ہے جو غریبوں میں تقسیم کے لئے حکومت کی جانب سے سربراہ کئے جانے والے غذائی اجناس بشمول چاول ‘ دال‘ گیہوں اور شکر کی ذخیرہ اندوزی کر رہے تھے۔ بتایاجا تا ہے کہ ٹاسک فورس کی جانب سے 200ایسے مقامات کی نشاندہی کی گئی ہے جہاں کالا بازاری کے ذریعہ حاصل کردہ غذائی اجناس کی ذخیرہ اندوزی کی جا رہی تھی۔ دونوں شہرو ںمیں ان دھاؤوں کے دوران گرفتار کئے گئے راشن شاپ ڈیلرس کے علاوہ ان سے ان اشیاء کو خریدنے والوں کے خلاف پی ڈی ایکٹ کے تحت کاروائی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے تاکہ غذائی اجناس کی کالابازاری کو آہنی پنجہ سے کچلا جا سکے کیونکہ کالابازاری عروج پر پہنچنے کے سبب دونوں شہروں میں ہی نہیں بلکہ ریاست کے دیگر اضلاع میں بھی اشیائے ضروریہ کی قیمتو ں میں اضافہ ریکارڈ کیا جا رہاہے اور غریب عوام کو راشن پر سربراہ کئے جانے والے چاول و دال ہی مہنگے داموںپر خریدنے پڑ رہے ہیں۔محکمہ سیول سپلائز کے عہدیداروں کی جانب سے حالیہ دنوں میں ریاست گیر سطح پر کئے گئے دھاؤوں کے دوران 80.6کروڑکے غذائی اجناس ضبط کئے گئے جو کہ گودامو ںمیں ذخیرہ کئے جارہے تھے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ ریاست میں غریب عوام کو راشن پر مہیا کروائے جانے والے اجناس کی عدم سربراہی اور ان غذائی اجناس کی بیرون ریاست منتقلی کے بعد انہیں دوبارہ بازارو ں میں فروخت کے لئے روانہ کیا جانے لگا ہیاسی لئے ان کے خلاف سخت کاروائی ناگزیر ہو چکی ہے اور اب تلنگانہ محکمہ سیول سپلائز نے فیصلہ کیا ہے کہ ریاست میں موجود تمام ڈیلروں پر خصوصی نظر رکھتے ہوئے کالابازاری پر قابو پایا جائے اور ان لوگوں کے خلاف کاروائی کی جائے جو کالابازاری کے فروغ میں مصروف ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT