Wednesday , August 23 2017
Home / سیاسیات / ڈی ایم کیخلاف کاروائی نہ کی گئی تو دھرنا یقینی : وزیر یو پی

ڈی ایم کیخلاف کاروائی نہ کی گئی تو دھرنا یقینی : وزیر یو پی

لکھنؤ، 3جولائی (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی مخلوط حکومت میں شامل سہیل دیوبھارتیہ سماج پارٹی کے صدر اور ریاستی وزیر اوم پرکاش راج بھر نے اپنے موقف پر قائم رہتے ہوئے کہا ہے کہ ضلع مجسٹریٹ (ڈی ایم) کے خلاف اگر کارروائی نہیں کی گئی تو کل وہ دھرنا پر ضرور بیٹھیں گے۔ راج بھر نے آج کہا کہ دھرنا کے اعلان کے بعد چیف منسٹر یا کسی دیگر سینئر وزیر یا بی جے پی کے لیڈر کا فون کال انھیں موصول نہیں ہوا ۔ تعطل برقرار ہے ۔ میڈیا میں خبریں آنے کے باوجود ضلع مجسٹریٹ کو ہٹایا نہیں گیا ہے ۔ کل صبح 10بجے تک کا وقت ہے ۔ضلع مجسٹریٹ نہیں ہٹاتو وہ ہر حال میں دھرنا دیں گے ۔ انہیں وزیر بنے رہنے کا کوئی شوق نہیں ہے لیکن انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان کے مطالبات تسلیم نہیں کئے گئے تو بھی وہ وزیر کے عہدے سے استعفیٰ نہیں دیں گے ۔انہوں نے کہا، ’’میں مخلوط حکومت کا ذمہ دار وزیر ہوں۔ میرے ضلع میں ہی جب میری نہیں سنی جا رہی ہے تو کارکنوں کی کون سنے گا۔ میں نے ڈی ایم کوعوامی مفاد سے متعلق 19 کاموں کی ذمہ داری دی تھی ، لیکن انہوں نے ایک بھی کام نہیں کیا ہے ۔ میں اس کے خلاف کل سے دھرنا پر بیٹھوں گا‘‘۔

TOPPOPULARRECENT