Sunday , September 24 2017
Home / ہندوستان / ڈی ڈی سی اے بدعنوانیوں کی تحقیقات کیلئے کمیشن کا قیام

ڈی ڈی سی اے بدعنوانیوں کی تحقیقات کیلئے کمیشن کا قیام

نئی دہلی ۔21ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) دہلی کابینہ نے آج ایک رکنی تحقیقاتی کمیشن تشکیل دینے  کا اعلان کیا جس کی قیادت سابق سالیسیٹر جنرل گوپال سبرامنیم کریں گے جو کرکٹ کی مجلس ڈی ڈی سی اے میں پائی جانے والی بے قاعدگیوں کی تحقیقات کرے گی ۔ کابینہ نے دہلی اسمبلی کا کل ایک خصوصی اجلاس بھی طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن میں مبینہ بے قاعدگیوں پر مباحثہ ہوگا  وزیراعظم اروند کجریوال کی صدارت میں مندرجہ بالا فیصلے کئے گئے ۔ اس موقع پر کجریوال نے اپنے ٹوئیٹر پر بھی مباحثہ کا تذکرہ کیا ۔ یاد رہے کہ عام آدمی پارٹی کی جانب سے وزیر مالیات ارون جیٹلی کے اس دورہ پر زبردست تنقیدیں کی گئی تھیں جب وہ کرکٹ اسوسی ایشن کے صدر تھے اور انہوں نے ایک دو سال نہیں بلکہ پورے 13سال تک اپنی وابستگی برقرار رکھی تھی ۔ اس موقع پر نائب وزیراعلیٰ منیش سسوڈیا نے کہا کہ تحقیقاتی کمیشن کے قیام کیلئے ہم ایوان میں ایک قرارداد پیش کریں گے ۔ دہلی سکریٹریٹ میں کجریوال کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار پر عائد کئے گئے الزامات اور دھاوے کے پس منظر میں عام آدمی پارٹی نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ سی بی آئی نے جو دھاوے کئے ہیں ان کا اصل نشانہ دراصل عام آدمی پارٹی سربراہ ہیں جو دراصل ڈی ڈی سی اے میں پائی گئی بدعنوانیوں سے متعلق فائل کی تلاش میں تھی اور اس روز سے پارٹی ارون جیٹلی کے استعفیٰ کا مطالبہ کررہی ہے ۔دوسری طرف دہلی حکومت کے ایک پیانل نے یہ تجویز پیش کی ہے کہ پروفیشنل کرکٹرس کی ایک عبوری کمیٹی کھیل سے متعلق تمام اُمور کی نگرانی کرے ۔ بی جے پی ایم پی کیرتی آزاد جو دہلی کی کرکٹ مجلس میں مبینہ بدعنوانیوں کے خلاف مہم چلارہے ہیں ‘ نے ڈی ڈی سی اے اُمور کی ڈی آر آئی کے ذریعہ تحقیقات کروانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT