Monday , August 21 2017
Home / دنیا / ژنجیانگ میں چین ۔ پاک مشترکہ سرحدی پٹرولنگ

ژنجیانگ میں چین ۔ پاک مشترکہ سرحدی پٹرولنگ

بیجنگ 21 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) چین اور پاکستان کی سرحدی افواج نے پہلی مرتبہ مقبوضہ کشمیر کو ژنجیانگ صوبہ سے جوڑنے والی سرحد پر مشترکہ پٹرولنگ کا آعاز کیا ہے ۔ یہ اطلاعات مل رہی ہیں کہ اس علاقہ سے تعلق رکھنے والے تقریبا 100 ایغور باشندے علاقہ سے فرار ہوگئے ہیں اور سمجھا جارہا ہے کہ وہ آئی ایس آئی ایس میں شامل ہوگئے ہیں۔ سرکاری میڈیا نے مشترکہ پٹرولنگ کی اطلاع دی جبکہ چین کے صدر ژی جن پنگ نے چینی مسلمانوں سے کہا کہ وہ چینی سماج اور ہدایات کے مطابق اپنے مذہب کی پابندی کریں۔ پیپلز ڈیلی آن لائین میں تقریبا ایک درجن تصاویر شائع کی گئی ہیں اور کہا گیا ہے کہ سرحدی دفاعی ریجمنٹ پیپلز لبریشن آرمی نے ژن جیانگ میں پاکستان کی بارڈر پولیس فورس کے ساتھ چین ۔ پاکستان سرحد پر مشترکہ پٹرولنگ میں حصہ لیا ہے ۔ تصاویر میں دکھایا گیا ہے کہ دونوں ممالک کی مسلح افواج کے دستے کئی مقامات پر پیدل پٹرولنگ کر رہے ہیں۔ یہ پہلی مرتبہ ہے کہ چین ۔ پاکستان نے حالیہ عرصہ میں یہاں مشترکہ پٹرولنگ کا اہتمام کیا ہو حالانکہ چین کی افواج اس علاقہ میں 2014 سے ہی پٹرولنگ کا کام کر رہی ہیں۔ حالانکہ یہ واضح نہیں کیا گیا ہے کہ وہ کیا حالات ہیں جن کی وجہ سے یہاں مشترکہ پٹرولنگ کی جا رہی ہے لیکن یہ پٹرولنگ ایسے وقت میں ہو رہی ہے جب یہ اطلاعات ہیں کہ تقریبا 100 ایغور مسلمان یہاں سے فرار ہوگئے ہیں اور وہ شائد آئی ایس آئی ایس میں شامل ہورہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT