Sunday , July 23 2017
Home / ہندوستان / ’کالادھن بھی برے وقت کا ساتھی‘

’کالادھن بھی برے وقت کا ساتھی‘

چیف منسٹر اتر پردیش اکھلیش یادو کا متنازعہ ریمارک
لکھنؤ۔/15نومبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک متنازعہ ریمارک میں چیف منسٹر اتر پردیش اکھلیش یادو نے آج بتایا ہے کہ ماہرین معاشیات کی یہ رائے ہے کہ عالمی مندی کے وقت ہندوستانی معیشت کو بلیک منی ( کالا دھن ) نے استحکام بخشا تھا۔ تاہم انہوں نے یہ وضاحت کی ہے کہ میں بلیک منی کے حق میں نہیں ہوں لیکن معاشی ماہرین کا کہناہے کہ عالمی بحران کے وقت ہندوستان کی معیشت ثابت قدم تھی کیونکہ بلیک منی ایک متوازی معیشت کے طور پر قائم تھی۔ چیف منسٹر نے آج ہند۔ مینمار۔ تھائی لینڈ فرینڈ شپ کارویل کو جھنڈی بتاکر روانہ کرنے سے قبل یہاں میڈیا سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میں ’ بلیک منی کے شدید خلاف ہوں اور میں اس کی حوصلہ افزائی نہیں چاہتا ۔ ان کا یہ ریمارک ایسے وقت آیا ہے جب حکومت نے بلیک منی کا صفایا کرنے کیلئے 500اور1000 روپئے کے نوٹ منسوخ کردینے کا اچانک فیصلہ کیا اور کرنسی نوٹ کی قلت کے باعث بینکوں اور اے ٹی ایمس کے باہر عوام کی طویل قطار یں دیکھی جارہی ہیں۔ اکھلیش یادو نے کہا کہ جو بھی حکومت غریبوں کو مشکلات سے دوچار کرتی ہے ایک نہ ایک دن اسے باہر کا راستہ دکھایا جاتا ہے اور موجودہ حکومت بھی عام آدمی کو تکالیف دے رہی ہے۔ چیف منسٹر کا یہ نقطہ نظر ہے کہ کرنسی نوٹوں کی منسوخی ، بلیک منی کی روک تھام میں کارگر ثابت نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ سب سے پہلے کرپشن پر روک لگادی جائے اور عوام کا شعور بیدار کیا جائے۔ محض 500 اور 1000 روپئے کے نوٹوں کی تبدیلی سے مسئلہ کا حل برآمد نہیں ہوتا، جن کے پاس یہ نوٹ ہیں وہ اب 2000 روپئے کے نوٹ کے انتظار میں ہیں۔

Leave a Reply

Top Stories

TOPPOPULARRECENT