Wednesday , October 18 2017
Home / ہندوستان / کالادھن کی ایس آئی ٹی زیادہ چوکس

کالادھن کی ایس آئی ٹی زیادہ چوکس

نئی دہلی ۔ 3 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) رقومات کی غیرقانونی منتقلی کو شیل کمپنیوں کے ذریعہ روکنے کی کوشش کرتے ہوئے خصوصی تحقیقاتی ٹیم نے اپنی چوکسی میں مزید اضافہ کردیا ہے تاکہ شیل کمپنیوں اور ان کے استفادہ کرنے والے مالکین کالادھن منتقل نہ کرسکیں۔ ایس آئی ٹی نے کہا کہ ایسے 2627 افراد 20 سے زیادہ کمپنیوں کے ڈائرکٹر ہیں جنہوں نے کمپنیوں کے قانون 2013ء کی خلاف ورزی کی ہے۔ ایک ہی مقام پر کم از کم 20 کمپنیاں 345 پتوں پر کارکرد ہیں۔ 19 کمپنیاں دیگر 19 کمپنیوں کے ساتھ جن کے ارکان عملہ کی تعداد 13581 ہے، مشترکہ پتہ رکھتی ہیں۔ سابق کمپنیوں کے قانون 1956ء کی دفعہ 275 کے تحت 77696 کمپنیاں ڈائرکٹر شپ سے متعلق معیاروں کی خلاف ورزی کی مرتکب پائی گئی ہیں۔ ایس آئی ٹی کی دہری حکمت عملی کے نتیجہ میں سپریم کورٹ کا ایک ریٹائرڈ جج بھی شیل کمپنیوں کی تشکیل کا ذمہ دار قرار پایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT