Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / کالج طالبات کو چاقوؤں سے مسلح کرنے ویمنس کمیشن کی تجویز

کالج طالبات کو چاقوؤں سے مسلح کرنے ویمنس کمیشن کی تجویز

امراوتی۔/24مئی، ( پی ٹی آئی) آندھرا پردیش ویمنس کمیشن نے کالج طالبات میں چاقوؤں کی تقسیم کا منصوبہ پیش کیا ہے تاکہ جرائم جیسے عصمت ریزی وغیرہ سے وہ اپنا بچاؤ کرسکیں۔ کمیشن کی صدرنشین این راجکماری آج وشاکھاپٹنم کے سرکاری ہاسپٹل میں عصمت ریزی سے متاثرہ خواتین سے ملاقات کے بعد جذبات سے مغلوب ہوگئیں۔ انہوں نے کہا کہ عصمت ریزی کرنے والوں کی برسر عام چمڑی ادھیڑ کرانہیں گشت کرانا چاہیئے۔ انہوں نے بتایا کہ ہم ایک قانون کی منصوبہ بندی کررہے ہیں جہاں بعض مرد جنگلی جانوروں جیسا سلوک کریں اور اس طرح کے ظلم پر اُتر آئیں تو پھر وہ سمجھتی ہیں کہ لڑکیوں کو بھی چاقوؤں سے مسلح کیا جانا چاہیئے۔ اس کام کیلئے قانون سازی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم عصمت ریزی کرنے والوں کی چمڑی ادھیڑ دیں گے۔ پولیس کو بھی چاہیئے کہ عصمت ریزی کرنے والے جب بھی پکڑے جائیں تو ان کے چہروں پر نقاب نہ ڈالیں اس کے بجائے سڑکوں پر انہیں گشت کرایا جائے ، لاتیں ماری جائیں اور انہیں جھاڑو سے پیٹنے کے بعد پولیس اسٹیشن لے جایا جائے۔ راجکماری نے کہا کہ نربھئے مقدمہ کی طرح عصمت ریزی کے مجرمین کو پھانسی دی جانی چاہیئے یا پھر کم از کم سزائے عمر قید دینی چاہیئے۔ انہوں نے کالجس، ہاسٹلس، کام کے مقامات اور ہاسپٹلس میں کلوز سرکٹ ٹی وی کیمروں کو لازمی قراردینے پر زور دیا تاکہ خواتین کے خلاف جرائم پر قابو پایا جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT