Sunday , October 22 2017
Home / ہندوستان / کالے دھن پر سرجیکل اسٹرائک ،آسام میں دو افراد فوت

کالے دھن پر سرجیکل اسٹرائک ،آسام میں دو افراد فوت

گوہاٹی، 10 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے 500اور 1000روپئے کے نوٹوں کے چلن کو بند کرنے کے اچانک اعلان سے آسام میں دو افراد ذہنی طور پر اتنے پریشان ہوگئے کہ دل کا دورہ پڑنے سے ان کی جان ہی چلی گئی۔ انہیں ڈر تھا کہ انہوں نے روزمرہ کے استعمال کے لئے جو پیسہ گھر میں جمع کررکھا تھا وہ بے کار ہوگیا ہے ۔گوہاٹی کے کمار پاڑہ علاقہ میں رہنے والے دین بندھو نے منگل کو اپنی بیٹی کی شادی کے لئے اپنی زمین فروخت کی تھی۔ انہوں نے رقم اپنے گھر میں رکھی ہوئی تھی۔ رات کو نوٹوں کا چلن بند ہونے کی خبر منظر عام پر آنے کے بعد وہ بے حد گھبراگیا۔ منگل کی شب وہ اپنی رقم جمع کرانے کے لئے اِدھر سے اُدھر اے ٹی ایم کے چکر لگاتا رہا مگر رقم جمع نہیں کراسکا۔ان کے خاندان کے افراد کے مطابق وہ کافی بے چین ہوگیا اور بھوکا ہی سوگیا۔ صبح کے وقت نہاتے وقت اسے دل کا دورہ پڑگیا اور موقع پر ہی دم توڑ دیا۔ اسی طرح کا واقعہ شب ساگر کے جیتو رحمان کے ساتھ پیش آیا وہ بھی بڑے کرنسی نوٹ بند ہونے کے اچانک اعلان سے گھبرا گئے اور دل کا دورہ پڑنے سے موت ہوگئی۔دراصل اگلے دن اس کے بھائی کی  شادی تھی جس کے لئے اُس نے مختلف ذرائع سے تین لاکھ روپے نقد جمع کئے تھے اور گھر میں رکھے ہوئے تھے ۔وزیراعظم کا اعلان سننے کے بعد جیتو نے بنک کے اے ٹی ایم کے ذریعہ پیسہ جمع کرانے کی کوشش کی اور رات ڈھائی بجے تک پیسہ جمع نہیں کراسکا۔خاندان کے لوگوں نے بتایا ہے کہ وہ رات تین بجے گھر لوٹا اور سونے چلا گیا ۔ نیند کے دوران ہی اسے دل کا دورہ پڑا اور موت ہوگئی۔

TOPPOPULARRECENT