Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ! کالے دھن کا انکشاف‘ جگن کے 10ہزار کروڑ روپئے بھی شامل

! کالے دھن کا انکشاف‘ جگن کے 10ہزار کروڑ روپئے بھی شامل

اپوزیشن لیڈر کے پاس 33ہزار کروڑ روپئے مالیتی 94ہزارایکڑ اراضیات اور معدنی کانیں : اوما مہیشور

حیدرآباد ۔10اکٹوبر ( سیاست نیوز) ملک گیر سطح پر ہوئے کالے دھن کے انکشاف میں صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی و قائد اپوزیشن اے پی قانون ساز اسمبلی وائی ایس جگن موہن ریڈی کا حصہ ( زیادہ کالا دھن) ہی سب سے زیادہ ہے ۔ وزیر آبپاشی حکومت آندھراپردیش ڈی اوما مہیشور راؤ نے یہ بات کہی اور بتایا کہ حیدرآباد سے کئے ہوئے کالے دھن کے انکشاف میں دس ہزار کروڑ روپئے سے زائد رقومات وائی ایس جگن موہن ریڈی کے ہی ہیں ۔ وجئے واڑہ میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر موصوف نے کہا کہ قانون کی آڑ میں جگن موہن ریڈی نے اپنے کالے دھن کو باقاعدہ بنالیا ۔ انہوں نے جگن موہن ریڈی کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ جگن موہن ریڈی نے کرپشن کے ذریعہ کمائی ہوئی دولت سے کئی ترقیاتی پروگرام انجام دے سکتے ہیں ۔ اوما مہیور  نے کہا کہ جگن کو دوسروں کے ناموں پر ( بے نامی)  تلگو ریاستوں میں ہزاروں ایکڑ اراضیات و معدنیات پائے جاتے ہیں ۔ انہوں نے جگن موہن ریڈی کے اضلاع میں پائے جانے والے اراضیات وغیرہ کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ 33,935 کروڑ روپئے مالیتی 94038 ایکڑ اراضیات کے علاوہ 1.81لاکھ ایکڑ اراضیات پر مبنی معدنی ذخائر جگن کے بے نامی پائے جاتے ہیں ۔ این لوکیش کے تعلق سے جگن میڈیا کی جانب سے کی جانے والی غلط تشہیر کا تذکرہ کرتے ہوئے  کہا کہ این لوکیش کے تعلق سے جگن میڈیا کو غلط تشہیر  پر نہ ہی کوئی یقین کریں گے اور نہ ہی کوئی خوش ہوں گے ۔ وزیرآبپاشی نے مزید کہا کہ لوکیش نے تعلیم کے ساتھ ساتھ تہذیب بھی سیھی ہے اور بڑوں و بزرگوں کا احترام کس طرح کرناچاہیئے وہ بخوبی واقف ہیں ۔ وزیر موصوف نے کہا کہ تونی میں پیش آئے نقصانات اور توڑ پھوڑ واقعہ میں وائی ایس آر کانگریس کے رول کا بہت جلد انکشاف ہوگا ۔ اوما مہیشور نے الزام عائد کیا کہ وائی ایس جگن موہن ریڈی پولی ویندولہ کو پانی نہ آنے کی غلط تشہیر کررہے ہیں ۔ انہوں نے اس بات کا ادعا کیا کہ بہت جلد پولی ویندولہ کو پانی سربراہ کر کے وہیں پر ہم تہنیتیں قبول کریں گے ۔ اوما مہیشور نے ایک اور سنسنی خیز انکشاف کیا کہ ایڈویولا پایہ کی قیامگاہ میں انڈر گراؤنڈ ( زیر زمین تہہ خانہ میں ) ہزاروں کروڑ روپئے کی تھلیاں پائی جانے سے متعلق عوام اظہار خیال کررہے ہیں ۔ علاوہ ازیں بنگلور میں واقع وائیٹ ہاؤز میں ان گنت لاریوں کے ڈمپس پائے جانے کا بھی الزام عائد کیا اور کہا کہ اگر واقعی جگن موہن ریڈی کو ریاست آندھراپردیش کی ترقی سے دلچسپی ہو تو وہ ان رقومات ( کالے دھن) وغیرہ سے ریاست کی ترقی کیلئے اقدامات کو یقینی بناسکتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT