Tuesday , March 28 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کالے دھن کو وائٹ میں تبدیل کرنے کاروبار عروج پر

کالے دھن کو وائٹ میں تبدیل کرنے کاروبار عروج پر

نظام آباد:22؍ نومبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)مرکزی حکومت کی جانب سے 500 اور 1000 روپئے کے نوٹوں پر پابندی عائد کرتے ہوئے ان نوٹوں کی تبدیلی کیلئے 30؍ ڈسمبر تک مہلت فراہم کرنے کے علاوہ ابتداء میں بینکوں میں 4 ہزار روپئے تبدیل کرنے کی سہولت فراہم کی گئی تھی اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے درمیانی افراد نے زبردست فائدہ حاصل کیا۔نہ صرف درمیانی افراد کو بلکہ مہاراشٹرا سے تعلق رکھنے والے بھی نظام آباد میں نوٹوں کی تبدیلی عمل میں لاتے ہوئے ایک ہفتہ تک اس کاروبار کو انجام دیا۔ ضلع نظام آباد سے 40 کلو میٹر دور پر واقع بلولی، دھرم آبادسے تعلق رکھنے والے کئی افراد نظام آباد پہنچ کر درمیانی افراد سے ربط پیدا کرتے ہوئے روز مرہ کے کاروبار کرنے والے مزدور پیشہ طبقہ کو لائنوں میں کھڑا کرتے ہوئے اپنی نوٹوں کو تبدیل کروایا اور مزدور طبقہ ایک ہفتہ تک ہر روز2 یا 3 مرتبہ لائنوں میں ٹھہرتے ہوئے مختلف بینکوں سے رقم حاصل کرتے ہوئے 1000تا 1500 روپئے کی کمائی کی۔آربی آئی کی جانب سے قواعدتبدیل کرتے ہوئے ہر روز 2000 روپئے تبدیل کرنے کے اعلان کے بعد بینکوں کی قطاروں میں کمی ہوئی ہے لیکن کالا دھن رکھنے والے افراد اپنے روپیوں کو تبدیل کرنے کیلئے کئی حربے استعمال کرتے ہوئے بینکوں میں کھاتہ رکھنے والے غریب افراد سے ربط پیدا کرتے ہوئے 2.50لاکھ روپئے کی رقم جمع کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ جس کی وجہ سے بینکوں میں قطارقابل لحاظ رہ رہی ہے اور نظام آباد ضلع میں کالے دھن کووائٹ میں تبدیل کرنے کے کاروبار بھی جاری ہیں شہر نظام آباد میں کئی افراد حیدرآباد اور دیگر مقامات سے بھی اپنے روپیوں کو تبدیل کروانے کی اطلاعات وصول ہورہی ہے۔ شہر نظام آباد سے تعلق رکھنے والے نامور ڈاکٹرس اپنے روپیوں کو تبدیل کرنے کیلئے درمیانی افراد سے ربط پیدا کرتے ہوئے ان کو تقریباًایک کروڑ روپئے تک حوالے کئے اور اپنی بلیک رقم کو ان درمیانی افراد کو حوالے کرتے ہوئے وائٹ منی کیلئے مسلسل ان سے ربط پیدا کرنے کی کوشش کی گئی تو اچانک فون بند ہوگیا جس کی وجہ سے یہ ڈاکٹرس بے حد پریشان نظر آرہے ہیں اور پولیس میں شکایت سے بھی گریز کررہے ہیں جبکہ یہ ڈاکٹرس سیاسی قائدین کے تعاون کے ذریعہ اپنے روپیوں کو حاصل کرنے کیلئے بھی کوشاں ہے اور اس اطلاع کو خفیہ رکھنے کی کوشش بھی کررہے ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT