Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس امیدواروں کی فہرست کل جاری ہوگی، 18 جنوری کو منشور کی اجرائی

کانگریس امیدواروں کی فہرست کل جاری ہوگی، 18 جنوری کو منشور کی اجرائی

ٹی آر ایس پر دولت کے بل پر کانگریس کو توڑنے کا الزام، ڈگ وجے سنگھ اور دیگر کی پریس کانفرنس
حیدرآباد /13 جنوری (سیاست نیوز) کانگریس 15 تا 17 جنوری اپنے جی ایچ ایم سی امیدواروں کا اعلان کرتے ہوئے 18 جنوری کو انتخابی منشور جاری کرے گی۔ یہ بات جنرل سکریٹری آل انڈیا کانگریس و انچارج تلنگانہ کانگریس امور ڈگ وجے سنگھ نے آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی، قائد اپوزیشن اسمبلی کے جانا ریڈی، قائد اپوزیشن کونسل محمد علی شبیر، رکن راجیہ سبھا وی ہنمنت راؤ اور دیگر بھی موجود تھے۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی جی ایچ ایم سی کے تمام 150 حلقوں سے مقابلہ کرے گی، جب کہ بلدی حلقوں کو محفوظ کرنے کے بعد جائزہ لینے کا وقت بھی نہیں دیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ فہرست رائے دہندگان میں چھیڑ چھاڑ کی گئی ہے، جس کی وجہ سے کانگریس کو عدلیہ سے رجوع ہونا پڑا، جب کہ کانگریس قائدین انتخابی مہم میں مصروف ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس دولت کے بل بوتے پر کانگریس کو توڑنا چاہتی ہے، اس کے باوجود پارٹی کے وفادار اور دیانتدار قائدین حکمراں جماعت کے لالچ کو ٹھکرا رہے ہیں۔ 2014ء کے عام انتخابات میں جاگو بھاگو کا نعرہ دینے والی ٹی آر ایس بلدی انتخابات میں سیٹلرس کے ساتھ جھوٹی ہمدردی کا اظہار کر رہی ہے۔

 

انھوں نے کہا کہ چند دن قبل تک ایک دوسرے کو جیل کی دھمکی دینے والے تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے چیف منسٹرس اب ایک دوسرے کو گلے لگا رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ صدر کانگریس سونیا گاندھی نے وعدہ کے مطابق علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دی اور کے سی آر نے اپنے ارکان خاندان کے ساتھ سونیا گاندھی اور راہول گاندھی سے ملاقات کرکے ٹی آر ایس کو کانگریس میں ضم کرنے کا وعدہ کیا تھا، لیکن تشکیل ریاست کے بعد وہ اس سے منحرف ہو گئے۔ انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم بننے سے قبل نریندر مودی نے پاکستان کو اینٹ کا جواب پتھر سے دینے کا ملک کے عوام سے وعدہ کیا تھا، مگر این ڈی اے دور حکومت میں ہندوستان کے اندرونی معاملات میں پاکستان کی مداخلت بڑھ گئی ہے اور نریندر مودی صرف تماشہ دیکھ رہے ہیں۔ نریندر مودی نے ملک کے عوام کو اندھیرے میں رکھ کر پاکستان کا دورہ کیا اور ایک ٹیلی ویژن نے انکشاف کیا ہے کہ ایک تقریب میں مودی جی نے شرکت کی اور دوسری تقریب میں انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم نے شرکت کی، جب کہ اس دورہ کے بعد اچانک پٹھان کوٹ کا واقعہ پیش آیا۔ اس سارے معاملے میں ایس پی سلویندر سنگھ کا رول مشکوک ہے، پھر بھی انٹلی جنس کے انتباہ کو نظرانداز کردیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ پنجاب پولیس کو اطلاع ہونے کے باوجود احتیاطی اقدامات نہیں کئے گئے اور اب ڈپٹی چیف منسٹر پنجاب قومی تحقیقاتی ایجنسیوں کے ذریعہ تحقیقات کی مخالفت کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ حکومت پنجاب اور پولیس منشیات کی غیر قانونی منتقلی میں ملوث ہے، جس کی سرمایہ کاری آئی ایس آئی کے ذریعہ ہو رہی ہے۔ ڈگ وجے سنگھ نے کہا کہ سلویندر سنگھ منشیات کی اسمگلنگ میں تعاون کر رہے ہیں اور ان کے دہشت گردوں کے ساتھ تعلقات ہیں، جب کہ کانگریس پارٹی اس کی سخت مذمت کرتے ہوئے بااختیار قومی ایجنسیوں سے تحقیقات کا مطالبہ کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے حملوں سے نمٹنے کے لئے این ایس جی کو نہ تو عصری ہتھیار فراہم کئے گئے اور نہ ہی صحیح تربیت دی گئی، جب کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے این ایس جی کو کلین چٹ دے دیا۔ انھوں نے وزیر اعظم پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف مودی جی اعلان کر رہے ہیں نہ تو کھاؤں گا اور نہ ہی کسی کو کھانے دوں گا، مگر دوسری طرف بدعنوانیوں میں ملوث افراد کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔ بابری مسجد مسئلہ پر پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ یہ مسئلہ سپریم کورٹ میں زیر دوران ہے، جب تک سپریم کورٹ کوئی فیصلہ نہ کردے، اس مسئلہ پر گفتگو مناسب نہیں ہے۔
ہریش راؤ کی مرکزی وزیر زراعت سے ملاقات
حیدرآباد ۔ 13 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : ٹی ہریش راؤ وزیر بڑی آبپاشی تلنگانہ نے مرکزی وزیر زراعت رادھا موہن سنگھ سے آج نئی دہلی میں ملاقات کی ۔ مسٹر راؤ نے گیہوں کی کاشت کے لیے مرکز سے 1000 کروڑ روپئے جاری کرنے کی درخواست کی ہے ۔ اس کے علاوہ انہوں نے مسٹر سنگھ سے تلنگانہ میں خشک سالی کی صورتحال پر بھی بات چیت کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT