Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / کانگریس ‘ اندھیرے میں تیر چلا رہی ہے یو پی میں تقررات پر بی ایس پی سربراہ مایاوتی کا رد عمل

کانگریس ‘ اندھیرے میں تیر چلا رہی ہے یو پی میں تقررات پر بی ایس پی سربراہ مایاوتی کا رد عمل

لکھنو 15 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) بی ایس پی نے آج کانگریس کی جانب سے راج ببر کو یو پی کانگریس کا صدر بنائے جانے اور شیلا ڈکشت کو وزارت اعلی امیدوار کے طور پر پیش کئے جانے پر تنقید کی اور کہا کہ یہ سب کچھ اندھیرے میں تیر چلانے کی کوششیں ہیں اور یہ نشانہ پر نہیں لگیں گے ۔ بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے ایک اعلامیہ میں کہا کہ پارٹیاں بدلنے والے راج ببر کو یو پی کانگریس کا صدر بنانا اور شیلا ڈکشت کو کانگریس کی وزارت اعلی امیدوار بنانا در اصل اندھیرے میں تیر چلانے کے مترادف ہیں اور یہ تیر نشانے سے چوک جائیں گے ۔ یہ واضح کرتے ہوئے کہ کانگریس اقتدار کے کہیں قریب نہیں ہے اور یہ سب کچھ عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس نہ صرف برہمن ووٹرس کو گمراہ کرنا چاہتی ہے بلکہ وہ سروا سماج کو بھی نشانہ بنا رہی ہے تاہم اس کی کوششوں سے رائے دہندوں پر کوئی اثر ہونے والا نہیں ہے ۔ مایاوتی نے ادعا کیا کہ ڈکشت کو وزارت اعلی امیدوار کے طور پر اس لئے پیش کیا جا رہا ہے تاکہ برہمنوں کو راغب کیا جاسکے ۔ یہ برادری کانگریس سے نالاں ہے ۔ شیلا ڈکشت نے سیاسی کیرئیر کا زیادہ عرصہ دہلی میں گذارا ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ نہ صرف کانگریس بلکہ بی جے پی اور سماجوادی پارٹی نے بھی برہمنوں کو نظر انداز کردیا ہے ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ اعلی ذاتوں کو بھی عزت و احترام صرف بی ایس پی نے دی ہے ۔ خاص طور پر برہمنوں کو تنظیم اور حکومت میں اچھے مواقع دئے گئے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ سرواجن ہتئے سرواجن سکھئے کے اصول پر بی ایس پی قیادت عمل پیرا ہے اور برہمن اسی پر زیادہ انحصار کرتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT