Wednesday , August 23 2017
Home / سیاسیات / کانگریس اور اپوزیشن ارکان کی ہنگامہ آرائی، لوک سبھا کا اجلاس دن بھر کیلئے ملتوی

کانگریس اور اپوزیشن ارکان کی ہنگامہ آرائی، لوک سبھا کا اجلاس دن بھر کیلئے ملتوی

نئی دہلی 25 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کی جانب سے اپنے سینئر رکن جیوتر آدتیہ سندھیا کے خلاف بی جے پی کے چند ارکان پارلیمنٹ کے ریمارکس اور گزشتہ روز گاؤں رکھشا کے نام پر ہجومی تشدد میں بے قصور دلتوں اور مسلمانوں کی ہلاکتوں کے خلاف شوروغل اور ہنگامہ آرائی کے سبب اپنے 6 ارکان کی لوک سبھا سے معطلی کے بشمول چند دیگر مسائل پر ایوان میں آج بھی ہنگامہ آرائی ہوئی جس کے نتیجہ میں لوک سبھا کا اجلاس کسی کارروائی کے بغیر دن بھر کے لئے ملتوی کردیا گیا۔ کانگریس کے ار کان نے اپنے 6 ساتھیوں کی معطلی کے احکام سے دستبرداری کا مطالبہ بھی کیا۔ کانگریس اور چند دیگر اپوزیشن جماعتوں نے گاؤ رکھشا کے نام پر ملک میں ہجومی تشدد کے واقعات پر تفصیلی بحث کا مطالبہ کیا۔ سندھیا نے کہاکہ بی جے پی ارکان ویریندر کمار اور نند کمار سنگھ چوہان نے اُن کے خلاف دلت برادری سے منسوب چند الزامات عائد کئے ہیں۔ اگر یہ الزامات درست ثابت ہوتے ہیں تو وہ ایوان کی رکنیت سے سبکدوش ہوجائیں گے۔ سندھیا نے بی جے پی قائدین سے مطالبہ کیاکہ وہ اپنے الزامات ثابت کریں، اگر وہ الزامات ثابت کرنے میں ناکام ہوجاتے ہیں تو اُنھیں اپنے استعفے پیش کردینا چاہئے۔لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر ملک ارجن کھرگے نے سندھیا کی مدافعت کرتے ہوئے کہاکہ گونا کے رکن پارلیمنٹ سندھیا گزشتہ 15 سال سے ایوان میں دلتوں کی فلاح و بہبود کیلئے آواز اُٹھاتے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT