Monday , July 24 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس اور جے اے سی پر نوجوانوں کو مشتعل کرنے کا الزام

کانگریس اور جے اے سی پر نوجوانوں کو مشتعل کرنے کا الزام

جے اے سی کی کل ریالی کے اعلان پر سخت تنقید ، ٹی آر ایس قائدین کا بیان
حیدرآباد۔20 فبروری (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹریہ سمیتی نے جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی جانب سے 22 فبروری کو بیروزگار نوجوانوں کی ریالی کے اعلان پر سخت تنقید کی ہے۔ پارٹی کے ارکان مقننہ پربھاکر ریڈی، سدھاکر ریڈی، گورنمنٹ چیف وہپ راجیشور ریڈی، بی وینکٹیشورلو نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کانگریس پارٹی اور جے اے سی پر نوجوانوں کو مشتعل کرنے کا الزام عائد کیا۔ ٹی آر ایس قائدین نے کہا کہ کودنڈارام نوجوانوں کو حکومت کے خلاف بھڑکانے کی کوشش کررہے ہیں اور مخلوعہ جائیدادوں پر عدم تقررات کا الزام بے بنیاد ہے۔ انہوں نے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ کودنڈارام کے بیانات سے ہرگز گمراہ نہ ہوں اور ریالی سے خود کو علیحدہ کرلیں۔ ٹی آر ایس ارکان مقننہ نے دعوی کیا کہ گزشتہ دو برسوں میں حکومت نے کئی محکمہ جات کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کئے ہیں۔ ہزاروں نوجوانوں کو ان تقررات سے روزگار حاصل ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی اور کودنڈارام کو حکومت کے یہ کارنامے دکھائی نہیں دے رہے ہیں۔ ٹی آر ایس ارکان مقننہ نے کہا کہ حکومت ایک لاکھ جائیدادوں پر تقررات کا منصوبہ رکھتی ہے اور یہ مرحلہ وار طور پر مکمل کئے جائیں گے۔ تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے ذریعہ ابھی تک تقررات کے سلسلے میں 34 اعلامیہ جاری کئے جاچکے ہیں۔ ارکان اسمبلی نے کہا کہ کانگریس پارٹی جو بدعنوانیوں میں غرق ہے وہ ٹی آر ایس پر الزامات عائد کررہی ہے۔ راجیشور ریڈی نے کہا کہ اے آئی سی سی جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ کو کے سی آر اور ان کی حکومت پر تنقید کا کوئی اخلاقی حق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈگ وجئے سنگھ کو خود ان کی ریاست کے عوام نے مسترد کردیا ہے اور وہ کانگریس کو دوبارہ اقتدار میں واپس لانے سے قاصر ہیں۔ ڈگ وجئے سنگھ تلنگانہ میں کانگریس کے اقتدار کا خواب دیکھ رہے ہیں۔ راجیشور ریڈی نے کہا کہ کانگریس پارٹی جو ایک قومی جماعت ہے، تلنگانہ میں سکڑ کر نلگنڈہ کانگریس پارٹی میں تبدیل ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس قائدین حکومت پر تنقید کے ذریعہ اپنی ساکھ بچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ حالانکہ عوام نے ٹی آر ایس کی تائید کا فیصلہ کرلیا ہے اور آئندہ عام انتخابات میں بھی ٹی آر ایس کی کامیابی یقینی ہے۔ انہوں نے کہا کہ فلاحی اسکیمات میں تلنگانہ ملک میں سرفہرست ریاست ہے۔ کوئی دوسری ریاست غریبوں اور کمزور طبقات کے لیے اس قدر فلاحی اسکیمات کے آغاز کی مثال پیش نہیں کرسکتی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT