Friday , March 24 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس بدعنوانیوں میں غرق ، ٹی آر ایس کی مخالفت کا اخلاقی حق نہیں

کانگریس بدعنوانیوں میں غرق ، ٹی آر ایس کی مخالفت کا اخلاقی حق نہیں

قانون ساز کونسل میں حکومت اور اپوزیشن ارکان کے درمیان تلخ مباحث ، کڈیم سری ہری کا جوابی وار
حیدرآباد۔27ڈسمبر (سیاست نیوز) کانگریس بدعنوانیوں میں غرق ہے اسے ٹی آر ایس کے خلاف کچھ بولنے کا اخلاقی حق نہیں ہے۔تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی جانب سے عوام کی فلاح و بہبود و ترقی کے اقدامات کئے جا رہے ہیں جبکہ کانگریس کے دور اقتدار میں بدعنوانیاں عروج پر تھیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کڈیم سری ہری نے قانون ساز کونسل میں مختصر مدتی مباحث کے دوران قائد اپوزیشن جناب محمد علی شبیر کے الزامات پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے یہ جملے کہے۔ ریاست میں امکنہ اسکیم اور ڈبل بیڈروم فلیٹس کی اسکیم پر قانون ساز کونسل میںمباحث کے دوران اپوزیشن اور حکومت کے درمیان تلخ مباحث دیکھے گئے۔ مسٹر کڈیم سری ہری نے کہا کہ حکومت کی جانب سے ڈبل بیڈ روم فلیٹس کی تعمیر کیلئے ٹنڈر کی اجرائی عمل میں لائی گئی ہے لیکن کنٹراکٹرس کی جانب سے امکنہ اسکیم کی تعمیرکے سلسلہ میں دلچسپی کا مظاہرہ نہیں کیا جا رہا ہے جس کی وجہ سے تاخیر ہو رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت نے امکنہ اسکیم کے لئے مفت ریت کی سربراہی کا منصوبہ تیار کیا ہے اور 31سمنٹ کمپنیوں سے 230روپئے تھیلہ کے اعتبار سے یادداشت مفاہمت پر دستخط بھی کئے جا چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت عوام کو مکانات کی فراہمی کے سلسلہ میں اپنے عہد کی پابند ہے ۔ مسٹر کڈیم سری ہری نے بتایا کہ 2لاکھ 60ہزار ڈبل بیڈ روم فلیٹس کی تعمیر کو منظوری دی ہے اور 14ہزار 224مکانات کی تعمیر کیلئے ٹنڈر طلب کئے جا چکے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اب تک 1217مکانات کی تعمیر مکمل کی جا چکی ہے ۔ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ ریاست کے مختلف مقامات پر 9588فلیٹس زیر تعمیر ہیں۔ انہوں نے سابق حکومت کے دور میں امکنہ اسکیم میں ہوئی بے قاعدگیوں اور بدعنوانیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت تلنگانہ کی جانب سے ان بے قاعدگیوں و بد عنوانیوں کی تحقیقات جاری ہیں۔ اسی دوران جناب محمد علی شبیر نے استفسار کیا کہ کیوں صرف حیدرآباد اور چیف منسٹر کے حلقہ میں کنٹراکٹرس ڈبل بیڈ روم اسکیم کی تعمیرات کیلئے رضامند ہو رہے ہیں؟ قائد اپوزیشن کے اس سوال پر ریاستی وزیر زراعت مسٹر پوچارم سرینواس ریڈی نے جواب دیتے ہوئے اپنے حلقہ میں جاری امکنہ کی تعمیری سرگرمیوں کی تصاویر ایوان میں دکھائی اور کہا کہ ان کے حلقہ میں بھی تعمیراتی سرگرمیاں جاری ہیں۔ جناب محمد علی شبیر نے امکنہ اسکیم پر سست رفتار عمل آوری پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت عوام سے دھوکہ کی مرتکب ہوئی ہے اور انتخابات سے قبل عوام کوہتھیلی میں جنت دکھاتے ہوئے گمراہ کیا گیا۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ کانگریس دور حکومت میں شروع کردہ 4.5لاکھ مکانات کی تعمیر کو فوری مکمل کیا جائے۔ محمد علی شبیر نے استفسار کیا کہ حکومت یہ بتانے سے قاصر ہے کہ ان مکانات کی تعمیر کے کیلئے بجٹ کہا ں سے آئے گا؟  انہوں نے ڈپٹی چیف منسٹر کی جانب سے سابق حکومت کے دور میں کی گئی بے قاعدگیوں کے تذکرہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جب کبھی کوئی بڑی اسکیم روشناس کروائی جاتی ہے تو بے قاعدگیاں سامنے آتی ہیں لیکن بے قاعدگیوں کے مرتکب افراد کے خلاف کاروائی کی جانی چاہئے۔ مبحث کے دوران رکن قانون ساز کونسل مسٹر بھانو پرساد اور ریساتی وزیر مسٹر جوپلی کرشنا راؤ نے بھی حصہ لیتے ہوئے بے قاعدگیو ں و بد عنوانیوں کے خلاف کاروائی کی مثالیں پیش کیں۔ ہنگامہ خیز مباحث کے دوران ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کڈیم سری ہری نے کانگریس کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ بدعنوانیو ںکا دوسرا نام کانگریس اور کانگریس کی بدعنوانیو ںکی مثال نہ صرف ریاستی بلکہ قومی سطح پر موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ راشٹرا سمیتی عوام سے کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے میں کانگریس سے بہتر ہے۔ انہوں نے سخت الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے کہا کہ بدعنوانیو ںکے معاملات میں عدالتوں کے چکر کاٹنے والوں کو موجودہ حکومت کے خلاف بولنے کا کوئی حق حاصل نہیں ہے۔ جناب سید الطاف حیدر رضوی نے امکنہ اسکیم پر مباحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ ایوان میں ڈپٹی چیف منسٹر نے جو بیان دیا ہے اس میں حکومت کی جانب سے تیار کردہ حکمت عملی نہیں ہے بلکہ سابق میں کیا ہوا اور اب کیا ہو رہا ہے اس پر بحث کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ سابق میں کیا ہوا اس پر بحث کرنے کے بجائے حکومت غیرب عوام کو امکنہ کی فراہمی کا کیا منصوبہ رکھتی ہے اس کی تفصیل سے ایوان کو واقف کروایا جائے۔ کانگریس اور ٹی آر ایس کے درمیان الزام اور جوابی الزامات کے دوران صدرنیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر سوامی گوڑ نے 28ڈسمبر تک کیلئے ایوان کی کاروائی کو ملتوی کردیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT