Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / کانگریس ’’ تھوکو اور بھاگو ‘‘ کی پالیسی پر عمل پیرا

کانگریس ’’ تھوکو اور بھاگو ‘‘ کی پالیسی پر عمل پیرا

پارلیمنٹ کی کارروائی مفلوج کردینے پر مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو کا ردعمل

نئی دہلی۔ 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) اطلاعات و نشریات اور شہری ترقیات کے وزیر ایم وینکیا نائیڈو نے آج کہا کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن کی عادت حکومت پر بے بنیاد اور نفرت آمیز الزامات لگانے کی ہو گئی ہے اور وہ “تھوکو اور بھاگو” کی پالیسی پر چل رہی ہے ۔مسٹر نائیڈو نے پارلیمنٹ کی عمارت کے احاطے میں نامہ نگاروں سے کہا کہ وہ اپوزیشن سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ بحث کریں، بحث کریں۔ اپوزیشن کی ہمیشہ سے عادت رہی ہے بے بنیاد الزامات لگا کر تماشا کرو۔ انہوں نے کہا کہ اسی اپوزیشن نے پہلے وزیر خارجہ سشما سوراج، پھر راجستھان کی وزیر اعلی وسندھرا راجے اور مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان کے بارے میں یہی کیا اور اب وزیر اعظم کو نشانہ بنایا ہے ۔انہوں نے کہا “یہ نفرت سیاسی ہتھکنڈہ ہے ۔ اپوزیشن ہمیشہ سے بحث سے بھاگتی رہی ہے ۔ پہلے اس نے کہا کہ بحث کرو، بحث ہوئی تو کہا کہ وزیر اعظم کو بلاؤ، وزیر اعظم آئے تو کہا کہ وہ بولیں، ہم نے کہا کہ وزیر اعظم مداخلت کریں گے اور وزیر خزانہ جواب دیں گے تو کسانوں کے مسائل یاد آنے لگے ۔ “مسٹر نائیڈو نے کہا کہ حزب اختلاف بتائے کہ ان کو کسانوں کا مسئلہ اٹھانے سے کس نے روکا ہے ۔ بیس دن سے اوپر ہو گئے ایوان میں رخنہ ڈالے ہوئے ۔ کسی نے بھی کسانوں کی بات نہیں اٹھائی۔ اب یہ اچانک سے کسان کا مسئلہ اٹھا دیا۔ انہوں نے کہا کہ اہل وطن سب دیکھ رہے ہیں کہ کیا تماشا چل رہا ہے ۔ کانگریس کی عادت بن گئی ہے کہ تھوکو اوربھاگو۔ آج تک اس نے کسی بھی معاملے میں بدعنوانی یا غلط کام کا ثبوت نہیں دیا۔مرکزی وزیر اطلاعات نے گذشتہ 16یوم سے پارلیمنٹ کی کارروائی مفلوج ہونے پر کانگریس کو مورد الزام ٹہرایا اور بتایا کہ وہ آحری دن آکر کہتے ہیں کہ انہیں کچھ انکشاف کرنا ہے، انہیں ایسا کرنے سے کس نے روکا ہے؟ گذشتہ 16یوم سے کیا کرتے رہے… آپ لوگوں ( کانگریس ) نے نوٹ بندی جیسے اہم مسئلہ پر پارلیمنٹ میں بحث کی اجازت کیوں نہیں دی۔ یہ سب عمل، ردعمل اور جوابی ردعمل کی مظہر ہے۔ مسٹر وینکیا نائیڈو نے کہا کہ پارلیمنٹ کی کارروائی میں عمداً رخنہ اندازی ملک کے عوام کے ساتھ سراسر ناانصافی ہے۔ جبکہ تم لوگوں نے (کانگریس ) بحث سے راہ فراری اختیار کرلی ہے… چونکہ تم لوگوں نے پارلیمنٹ کو مفلوج کردیا ہے لہذا دوسروں پر تنقید کا تمہیں اخلاقی حق نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT