Friday , June 23 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس دور میں تلنگانہ آبپاشی پراجیکٹس کو نظر انداز کیا گیا

کانگریس دور میں تلنگانہ آبپاشی پراجیکٹس کو نظر انداز کیا گیا

پارٹی قائدین کو حکومت پر تنقید کرنے کا حق نہیں۔ نائب صدر نشین ریاستی پلاننگ کمیشن نرنجن ریڈی
حیدرآباد۔/13ڈسمبر، ( سیاست نیوز) ریاستی پلاننگ کمیشن کے نائب صدر نشین نرنجن ریڈی نے الزام عائد کیا کہ کانگریس دور حکومت میں تلنگانہ کے آبپاشی پراجکٹس کو نظرانداز کردیا گیا تھا۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے نرنجن ریڈی نے کہا کہ کانگریس قائدین آج پراجکٹس کے مسئلہ پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں اور ان کے الزامات میں کوئی سچائی اور حقائق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی پارٹی جس نے متحدہ آندھرا پردیش میں تلنگانہ کو نظر انداز کردیا اس کے قائدین کو آج حکومت پر تنقید کا کوئی حق حاصل نہیں۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ کے کانگریس قائدین اس وقت خاموش رہے جب آندھرائی حکمرانوں نے تلنگانہ کے ساتھ ناانصافی کی لیکن آج پراجکٹس کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا کرنے کیلئے بے قاعدگیوں کے الزامات عائد کررہے ہیں۔ نرنجن ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد ہی آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر پر توجہ مرکوز ہوئی ہے اور اس کام کا سہرا کے سی آر کے سر جاتا ہے جو تلنگانہ کو سرسبز و شاداب بنانے کا عہد کرچکے ہیں۔ حکومت تمام زیر التواء آبپاشی پراجکٹس کو مقررہ مدت میں مکمل کرنے کے اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر وائی ایس راج شیکھر ریڈی کے دور حکومت میں پولی چنتلا پراجکٹ کو پولیس کی نگرانی میں مکمل کیا گیا لیکن کانگریس قائدین خاموش رہے۔ پوتی ریڈی پاڈو پراجکٹ کے ذریعہ تلنگانہ کے ساتھ ناانصافی کی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ کانگریس کے رکن اسمبلی چنا ریڈی نے 20 جنوری 2007 کو اس پراجکٹ کے حق میں مضمون تحریر کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ پوتی ریڈی پاڈو پراجکٹ کی تائید کرنے پر چنا ریڈی کو اسمبلی کی رکنیت سے استعفی دینا چاہیئے اور تلنگانہ عوام سے معذرت خواہی کرنی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس بات کو ثابت کرسکتے ہیں کہ چنا ریڈی نے اس پراجکٹ کی تائید کی تھی۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ آندھرائی پراجکٹس کی تعمیر پر خاموشی اختیار کرنے والے تلنگانہ کے کانگریس قائدین آج سیاسی مقصد براری کیلئے ڈرامے کررہے ہیں۔ کانگریس دور حکومت میں اگر یہ قائدین پراجکٹس کی تعمیر پر اعتراض کرتے تو آج تلنگانہ کے ساتھ پانی کے معاملہ میں اس قدر ناانصافی نہ ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ کرشنا وینی ایگروز فارمس میں چنا ریڈی کی حصہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ پالمور رنگاریڈی پراجکٹ کو بہر صورت مکمل کیا جائے گا اور عوام کی بھلائی کیلئے حکومت کسی بھی حد تک جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی طاقت پراجکٹ کی تعمیر میں رکاوٹ نہیں بن سکتی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT