Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس سے حیدرآباد کی ترقی پر اقدامات کی تفصیلات پیش کرنے کا مطالبہ

کانگریس سے حیدرآباد کی ترقی پر اقدامات کی تفصیلات پیش کرنے کا مطالبہ

آندھرائی حکمرانوں پر تلنگانہ کو نظر انداز کرنے کا الزام ، ٹی آر ایس ایم ایل سی کے پربھاکر کا بیان
حیدرآباد۔ 28 ڈسمبر (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹر سمیتی نے کانگریس پارٹی سے مطالبہ کیا کہ وہ حیدرآباد کی ترقی کیلئے کئے گئے اقدامات کی تفصیلات بیان کریں۔ پارٹی کے رکن قانون ساز کونسل کے پربھاکر نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کانگریس قائدین پر الزام عائد کیا کہ وہ شہر کی ترقی سے متعلق حکومت کے اقدامات پر اپنی دعویداری پیش کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس قائدین کو چاہئے کہ وہ حیدرآباد کی ترقی کے بارے میں وائیٹ پیپر جاری کریں۔ کانگریس کے 10 سالہ دورِ حکومت میں شہر میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی اور عالمی معیار کا شہر بنانے کیلئے کوئی اقدام نہیں کیا گیا۔ آندھرائی حکمرانوں نے شہر اور تلنگانہ کو بری طرح نظرانداز کردیا تھا۔ ٹی آر ایس نے برسراقتدار آنے کے بعد 18 مہینوں میں حیدرآباد کو ترقی یافتہ شہروں کی صف میں کھڑا کردیا ہے۔ پربھاکر نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت حیدرآباد کو دُنیا کے ترقی یافتہ شہروں کی فہرست میں شامل کرنے کا تہیہ کرچکی ہے اور اس نے کئی منفرد پروجیکٹس کا منصوبہ بنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ چار برسوں میں حیدرآباد کا نقشہ ملک کے لئے مثالی رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ مختلف ریاستوں کی حکومتیں حیدرآباد کی ترقی سے متاثر ہوکر حکومت سے صلاح و مشورہ کررہی ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ شہر کی ترقی کو قبول کرنے کے بجائے کانگریس قائدین سستی شہرت کیلئے حکومت پر الزامات عائد کررہے ہیں۔ انہوں نے کانگریس قائدین کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت کے خلاف اپنی بیان بازی کو ترک کردیں، ورنہ ٹی آر ایس قائدین اس کا مناسب جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے تلنگانہ کو برقی بحران سے نجات دی ہے اور موسم گرما میں برقی کٹوتی نہیںکی گئی۔ ریاست کی تقسیم سے قبل آندھرائی حکمرانوں نے پروپگنڈہ کیا تھا کہ تلنگانہ ریاست پسماندہ ریاست ثابت ہوگی لیکن کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں ٹی آر ایس حکومت نے اسے غلط ثابت کر دکھایا۔

TOPPOPULARRECENT