Thursday , June 29 2017
Home / Top Stories / کانگریس سے خارج برکھا سنگھ بی جے پی میں شامل

کانگریس سے خارج برکھا سنگھ بی جے پی میں شامل

وزیراعظم مودی کی پالیسیوں کی ستائش، خواتین کیلئے کام کرنے کا عزم
نئی دہلی 22اپریل (سیاست ڈاٹ کام) دہلی مہیلا کانگریس کی سابق صدر برکھا شکلا سنگھ بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہوگئی ہیں۔بی جے پی کے قومی نائب صدر شیام جاجو اور مرکزی وزیر وجئے گوئل کی موجودگی میں ریاستی دفتر میں آج منعقدہ پریس کانفرنس میں برکھا نے بی جے پی میں شامل ہونے کا اعلان کیا۔ انہیں کل پارٹی مخالف سرگرمیوں کا الزام لگا کر کانگریس سے چھ سال کے لئے نکال دیا گیا تھا۔اس سے پہلے جمعرات کو دہلی ویمنس کمیشن کی سابق صدر برکھا نے دہلی کانگریس صدر اجئے ماکن پر بدسلوکی کا استعمال کا الزام لگاتے ہوئے استعفیٰ دے دیا تھا۔ تاہم انہوں نے کہا تھا کہ وہ پارٹی میں رہیں گی۔ انہوں نے کانگریس نائب صدر راہول گاندھی پر کارکنوں کی بات نہ سننے کا الزام لگایا تھا۔سابق ممبر اسمبلی نے بی جے پی میں شامل ہونے کے موقع پر کہا کہ کانگریس پہلے عوامی حمایت والی پارٹی تھی اور اب اس میں کنبہ پروری ہے ۔ کانگریس لیڈروں میں سچ سننے کی صلاحیت نہیں رہ گئی ہے ۔ کانگریس کافی گر گئی ہے جس کا انہیں بہت دکھ ہے ۔ یہ پوچھے جانے پر کہ صدر مہیلا کانگریس کے عہدے سے استعفیٰ دیتے ہوئے انہوں نے پارٹی نہ چھوڑنے کی بات کہی تھی، برکھا نے کہا کہ جب کانگریس نے انہیں پارٹی سے نکال دیا تب ان کے سامنے کوئی متبادل نہیں بچا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی کی پالیسیوں سے متاثر ہو کر بی جے پی میں شامل ہوئی ہیں۔ انہیں عہدے کی کوئی خواہش نہیں ہے اور وہ خاص طورپر خواتین کی فلاح و بہبود کے کام کرنے کے لئے بی جے پی میں شامل ہوئی ہیں۔برکھا نے کہا کہ بی جے پی خواتین اور بالخصوص مسلم خواتین کو تین طلاق سے آنے والی دقتوں کے تعلق سے جس طرح کام کر رہی ہے اس سے وہ متاثر ہوئیں۔برکھا خواتین کے لیے رضاکار تنظیم کے ذریعے کام کرتی ہیں۔ اس تنظیم سے بڑی تعداد میں مسلم خواتین وابستہ ہیں۔دہلی کے تینوں کارپوریشنوں کے 23 اپریل کو ہونے والے انتخابات سے پہلے برکھا کے کانگریس لیڈروں پر دیئے گئے بیان کا پارٹی نے فوری طورپر نوٹس لیتے ہوئے انہیں چھ سال کے لئے پارٹی سے نکال دیا تھا۔دہلی کانگریس کی قدآور لیڈر اور شیلا حکومت میں وزیر رہے اروندر سنگھ لولی نے بھی منگل کو کانگریس قیادت پر میونسپل انتخابات میں ٹکٹ فروخت کرنے کا الزام لگاتے ہوئے پارٹی سے مستعفی ہوکر بی جے پی میں شمولیت اختیار کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT