Tuesday , October 24 2017
Home / سیاسیات / کانگریس و دیگر اپوزیشن پارٹیوں کا لوک سبھا سے واک آؤٹ

کانگریس و دیگر اپوزیشن پارٹیوں کا لوک سبھا سے واک آؤٹ

نئی دہلی، 11 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج لوک سبھا میں ’’اہانت آمیز‘‘ تبصرہ کے خلاف جو بی جے پی کے رکن نے اس کے قائدین کے خلاف کیا تھا، احتجاج جاری رکھا اور لوک سبھا کی کارروائی  سے ترنمول کانگریس، راشٹریہ جنتادل، جنتادل (یو) کے ارکان کے ساتھ واک آؤٹ کیا، کیونکہ معذرت خواہی کے ان کے مطالبہ پر حکومت یا اسپیکر نے کوئی جواب نہیں دیا تھا۔ ایوان کی کارروائی آج جیسے ہی شروع ہوئی، کانگریس ارکان وسط میں جمع ہو گئے۔ وہ پلے کارڈس لہرا رہے تھے اور حکومت مخالف نعرے بازی کر رہے تھے۔ اسپیکر سمترا مہاجن نے ان کے احتجاج کا کوئی اثر قبول کئے بغیر وقفہ سوالات کا آغاز کرنے سے پہلے کانگریسی قائد ملک ارجن کھڑگے کو وقفہ صفر کے آغاز میں تقریر کی اجازت دی۔ کھڑگے نے کہا کہ بی جے پی رکن وریندر سنگھ نے معذرت خواہی سے نہ صرف انکار کردیا، بلکہ اپنے بیان پر اٹل رہنے کا بھی اعلان کیا ہے۔
لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر نے کہا کہ بی جے پی رکن نے پارٹی قائدین کے خلاف  اہانت آمیز تبصرے کئے ہیں۔  وریندر سنگھ کو یا تو معذرت خواہی کرنی چاہئے یا آپ (اسپیکر) انھیں معطل کردیں۔
راجیہ سبھا کی کارروائی چوتھے دن بھی نہ چلی
نئی دہلی، 11 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) نیشنل ہیرالڈ کیس میں سونیا گاندھی اور راہول گاندھی کو عدالتی سمن پر برہم کانگریس پارٹی نے راجیہ سبھا کی کارروائی آج چوتھے دن بھی مفلوج کردی ۔ پارٹی کے ارکان نے نعرے لگاتے ہوئے حکومت پر انتقامی سیاست کا الزام عائد کیا ۔ آج صبح جیسے ہی ایوان کی کارروائی کا آغاز ہوا کانگریس ارکان نے مسلسل رکاوٹیں پیدا کرنی شروع کردیں ۔ صدر نشین حامد انصاری نے ایوان میں نظم بحال کرنے کی ہر ممکن کوشش کی، جو ناکام رہی ۔ کئی کانگریس ارکان حکومت کے خلاف نعرے لگاتے ہوئے ایوان کے وسط میں پہونچ گئے ۔

TOPPOPULARRECENT