Wednesday , August 16 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس پارٹی میں گروپ بندیوں و جھگڑوں سے اظہار بیزارگی

کانگریس پارٹی میں گروپ بندیوں و جھگڑوں سے اظہار بیزارگی

سکھیندر ریڈی ، جی ویویک ، جی ونود اور سی پی آئی رکن اسمبلی رویندر جین کی کل ٹی آر ایس میں شمولیت
حیدرآباد ۔ 13 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے رکن پارلیمنٹ مسٹر جی سکھیندر ریڈی ، سابق رکن پارلیمنٹ مسٹر جی ویویک سابق وزیر مسٹر جی ونود کانگریس کے رکن اسمبلی بھاسکر راؤ کے علاوہ سی پی آئی کے رکن اسمبلی رویندر کمار نے 15 جون کو حکمران ٹی آر ایس میں شامل ہونے کا اعلان کیا ہے ۔ آج یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر جی سکھیندر ریڈی نے کہا کہ کانگریس پارٹی کے اندرونی جھگڑوں گروپ بندیاں اور اختلافات سے وہ بدظن ہوگئے ہیں اور سنہرے تلنگانہ کی تعمیر میں حصہ دار بننے کے لیے وہ ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں ۔ انہیں 2 مرتبہ ایم پی کا ٹکٹ دینے پر وہ صدر کانگریس سے اظہار تشکر کرتے ہوئے پارٹی نے انہیں جو ذمہ داری دی ہے اس کو بخوبی نبھانے کی وہ آخری دم تک کوشش کی ہے ۔ لیکن کانگریس پارٹی کی گروپ بندیوں سے وہ بدظن ہوچکے ہیں جس کی وجہ سے کانگریس چھوڑ کر ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں ۔ سابق رکن پارلیمنٹ مسٹر جی ویویک نے کہا کہ ضلع کریم نگر میں کانگریس پارٹی گروپ بندیوں کا شکار ہوگئی ہے ۔ ان کے لیے راستے کٹھن کیے جارہے ہیں ۔ شکست سے دوچار ہونے کا اندازہ ہونے کے باوجود وہ اور ان کے بھائی نے کانگریس کے ٹکٹ پر مقابلہ کیا ہے اور کانگریس پارٹی کو مستحکم کرنے کی ہر ممکن کوشش کی ہے ۔ مگر کانگریس پارٹی میں ڈسپلن دن بہ دن گھٹتی جارہی ہے ۔ انہیں کانگریس میں کافی موقع ملے ہیں ۔ جس کے لیے وہ صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی سے اظہار تشکر کرتے ہیں اور سونیا گاندھی نے جو علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دیا ہے وہ ناقابل فراموش ہے جس کو تلنگانہ کی عوام ہمیشہ یاد رکھے گی ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر تلنگانہ کو ترقی دینے کے لیے دن رات محنت کررہے ہیں ۔ انہوں نے کئی نئی فلاحی اسکیمات متعارف کرتے ہوئے سماج کے تمام طبقات کا اعتماد حاصل کیا ہے ۔ ان کے آنجہانی والد جی وینکٹ سوامی کے ادھورے خوابوں کی تکمیل کے لیے وہ ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں ۔ مریال گوڑہ اسمبلی حلقہ کی نمائندگی کرنے والے کانگریس کے رکن اسمبلی مسٹر بھاسکر راؤ نے کہا کہ انہیں کانگریس سے مستعفی ہونے پر اظہار دکھ کیا اور آواز گلوگیر ہونے کے ساتھ ساتھ اشکبار ہوگئے ۔ اسمبلی حلقہ دیورکنڈہ ضلع نلگنڈہ کی نمائندگی کرنے والے سی پی آئی کے رکن اسمبلی مسٹر رویندر کمار نے کہا کہ وہ اپنے اسمبلی حلقہ کی ترقی کے لیے ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی قائد اپوزیشن مسٹر کے جانا ریڈی اور سابق مرکزی وزیر مسٹر ایس جئے پال ریڈی نے کانگریس نے ان ناراض قائدین کو کافی منانے کی کوشش کی مگر ان کی کوشش رائیگاں گئیں کل بھی کیپٹن اتم کمار ریڈی نے سابق وزیر مسٹر جی ونود کی قیام گاہ پہونچکر ویویک اور ونود سے کافی دیر تک بات چیت انہیں پارٹی نا چھوڑنے کا مشورہ دیا ۔ پارٹی میں پائے جانے والے ان کے تمام مسائل کو حل کرنے کا تیقن دیا تاہم دونوں بھائیوں نے انہیں اپنے ٹی آر ایس میں شامل ہونے کے فیصلے سے واقف کرادیا ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ دونوں بھائیوں نے سابق ریاستی وزیر مسٹر ڈی سریدھر بابو کی شکایت کرتے ہوئے ان پر پارٹی میں گروپ بندیوں کو فروغ دینے کا الزام عائد کیا ۔ واضح رہے کہ بروز اتوار کانگریس کے رکن پارلیمنٹ مسٹر جی سکھیندر ریڈی اور کانگریس کے رکن اسمبلی مسٹر بھاسکر راؤ نے فارم ہاوز پہونچکر چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر سے ملاقات کی ان کی اور جی ویویک جی ونود اور سی پی آئی کے رکن اسمبلی رویندر کمار کی ٹی آر ایس میں شمولیت کے فیصلے سے واقف کرایا ۔ چیف منسٹر نے انہیں 15 جون کو ٹی آر ایس میں شامل ہونے کا مشورہ دیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT