Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس پارٹی کی حالیہ شکست عارضی

کانگریس پارٹی کی حالیہ شکست عارضی

2019 میں بھاری اکثریت سے کامیاب ہونے کا ادعا ، کے جانا ریڈی
حیدرآباد ۔ 20 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز اسمبلی مسٹر کے جانا ریڈی نے پارٹی کی حالیہ شکستوں کو عارضی قرار دیتے ہوئے کہا کہ 2019 کے عام انتخابات میں کانگریس پارٹی بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کرنے کی پیش قیاسی کی ہے ۔ آج سی ایل پی آفس اسمبلی میں میڈیا سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے مسٹر کے جانا ریڈی نے اسمبلی حلقہ پالیرو کے ضمنی انتخابات میں کامیابی حاصل کرنے والے ریاستی وزیر ٹی ناگیشور راؤ نے کہا کہ سیاست میں ہار جیت لگی رہتی ہے اور کانگریس کے لیے یہ کوئی نئی بات نہیں ہے ۔ انہوں نے آسام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہاں بی جے پی کے صرف 5 ارکان اسمبلی تھے تاہم اس مرتبہ حکومت تشکیل دینے کے لیے بی جے پی کو مکمل اکثریت حاصل ہوئی ہے ۔ کانگریس پارٹی بھی 2019 کے عام انتخابات میں بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کرتے ہوئے اقتدار پر واپس ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ پالیرو کے ضمنی انتخابات میں کانگریس کے تمام قائدین نے اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے کام کیا ہے ۔ گھر گھر پہونچ کر عوام سے ملاقات کی ہے ۔ تاہم حکومت نے اقتدار کا بیجا استعمال کیا ہے ۔ جس کی وجہ سے ٹی آر ایس کو کامیابی حاصل ہوئی ہے کانگریس پارٹی عوام کے فیصلے کو قبول کرتی ہے اور مستقبل میں بھی اس طرح اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے عوام کا اعتماد حاصل کرنے میں کامیاب ہوگی ۔ انہوں نے ملک بھر میں کانگریس کے کمزور مظاہرے کے تعلق سے پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ صرف آسام میں ہی بی جے پی کو فائدہ پہونچا ہے ۔ باقی تمام ریاستوں میں بی جے پی کا بھی موقف کمزور ہوگیا ہے ۔ چند ماہ بعد کانگریس پارٹی کا موقف مستحکم ہوگا ۔ ملک بھر میں کانگریس پارٹی برسر اقتدار آئے گی ۔ قومی سطح پر بی جے پی کا متبادل کانگریس ہے ۔ تلنگانہ کے انتخابات میں کانگریس کی مسلسل شکست پر پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس کی کامیابیاں عارضی ہیں کانگریس پھر لوٹ کر اقتدار میں آئے گی ۔ ریاست میں سماج کے تمام طبقات کوئی نہ کوئی مسائل سے پریشان ہیں انہیں موضوع بحث بناتے ہوئے کانگریس پارٹی عوام کے درمیان پہونچے گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT