Monday , September 25 2017
Home / سیاسیات / کانگریس پر پارلیمنٹ کو ڈرانے اور خاموش کرنے کا الزام

کانگریس پر پارلیمنٹ کو ڈرانے اور خاموش کرنے کا الزام

نیشنل ہیرالڈ مقدمہ پر ہنگامہ آرائی کی مذمت ، وینکیا نائیڈو کا بیان
نئی دہلی ۔ 9 ۔ ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج الزام عائد کیا کہ نیشنل ہیرالڈ کیس میں سونیا گاندھی اور راہول کو عدالت کی طرف سے راحت نہ دیئے جانے کے بعد کانگریس اب پارلیمنٹ کو ڈرانے دھمکانے اور خاموش کرنے کی کوششوں میں ملوث ہورہی ہے۔ کانگریس نے حکومت پر اپنے قائدین کو سیاسی انتقال کا نشانہ بنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے پارلیمانی کارروائی میں ہنگامہ آرائی کا سلسلہ جاری رکھا ہے کہ اس دوران وزیر پارلیمانی امور ایم وینکیا نائیڈو نے جوابی وار کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس ، پارلیمانی کارروائی کو غیر کارکرد بناتے ہوئے جمہوریت کیلئے خطرہ پیدا کر رہی ہے ۔ نائیڈو نے راہول کے اس الزام کو مسترد کردیا کہ وزیراعظم کے دفتر (پی ایم او) سے آنے والا یہ مقدمہ  100 فیصد سیاسی انتقام پر مبنی ہے اور اس بات پر تعجب کا اظہار کیا کہ آیا کانگریس کے نائب صدر آیا سابق وزیراعظم منموہن سنگھ پر تنقید تو نہیں کر رہے ہیں کیونکہ یہ مقدمہ اس وقت دائر کیا گیا تھا جب یو پی اے برسر اقتدار تھی۔ انہوں نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی لیڈر سبرامنیم سوامی جنہوں نے ماضی میں یہ مقدمہ دائر کیا تھا اس وقت زعفرانی جماعت (بی جے پی) میں شامل نہیں تھے۔ وینکیا نائیڈو نے راہول کا الزام ان کے ہی سر ڈالتے ہوئے کہا کہ یقیناً جمہوریت خطرہ میں ہے اور کانگریس لوک سبھا انتخابات میں اپنی شکست کا انتقام عوام سے لیتے ہوئے پارلیمانی کارروائی میں رکاوٹ پیدا کر رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT