Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کو سرجری کی ضرورت نہیںتو پوسٹ مارٹم کی نوبت آجائیگی

کانگریس کو سرجری کی ضرورت نہیںتو پوسٹ مارٹم کی نوبت آجائیگی

کانگریس رکن اسمبلی کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی کا ریمارک
حیدرآباد ۔4  جون (سیاست نیوز) کانگریس کے سینئر رکن اسمبلی و سابق ریاستی وزیر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ کانگریس پارٹی کو فوری سرجری کرنے کی ضرورت ہے ورنہ پوسٹ مارٹم کرنے کی نوبت آجائے گی۔ ریاستی وزیر ہریش راؤ سے ملاقات کرنے کے بعد سنسنی خیز ریمارک کرتے ہوئے سیاسی حلقوں میں ہلچل مچا دی۔ کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی افواہوں کے درمیان انہوں نے آج منسٹرس کوارٹرس پہنچ کر ریاستی وزیرآبپاشی ہریش راؤ سے تقریباً آدھا گھنٹے تک بات چیت کی۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہیکہ دونوں کے درمیان ٹی آر ایس میں شمولیت کیلئے بات چیت ہوئی ہے۔ بعدازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ ہریش راؤ کی برتھ ڈے کے موقع پر وہ امریکہ میں تھے حیدرآباد پہنچتے ہی انہیں مبارکباد دینے کیلئے ان کی قیامگاہ آئے ہیں۔ ان کے درمیان کوئی سیاسی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔ ان کی ٹی آر ایس میں شمولیت پر پوچھے گئے سوال کا راست جواب دینے کے بجائے کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے میڈیا سے خود سوال کیا کہ کبھی انہوں نے ٹی آر ایس میں شامل ہونے کی بات کہی ہے۔ کانگریس کے مستقبل کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ فوری کانگریس کو سرجری کرنے کی ضرورت ہے ورنہ پوسٹ مارٹم کرنے کی نوبت آجائے گی۔ انہوں نے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی کو سخت تنقید کانشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اتم کمار ریڈی سابق صدر مسٹر پنالہ لکشمیا سے بھی بدتر ہے۔ ریاست میں پارٹی شکست کی اخلاقی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کیپٹن اتم کمار ریڈی کو پارٹی صدارت سے مستعفی ہوجانے کا مطالبہ کیا۔ پارٹی قائدین کی تساہلی اور سنجیدگی نہ ہونے کی وجہ سے ضمنی انتخابات میں کانگریس شکست سے دوچار ہورہی ہے۔ اگر وہ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ہوتے تو پارٹی امیدواروں کو کامیاب بناتے یا اخلاقی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے صدارت سے مستعفی ہوجاتے۔ آئندہ عام انتخابات کیلئے چیف منسٹر کے امیدوار کا ابھی اعلان کرنے کا مطالبہ کیا۔ تلنگانہ میں پارٹی کی صورتحال پر صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی کو مکتوب روانہ کرنے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ صرف گاندھی بھون میں پریس کانفرنس کا اہتمام کرنے سے پارٹی مستحکم نہیں ہوتی۔ اپنے بھائی کومٹ ریڈی راجگوپال ریڈی کی بھونگیر لوک سبھا سے شکست کیلئے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی کی سیاسی گروپ بندیوں کو ذمہ دار قرار دیا۔ علحدہ تلنگانہ ریاست کی جدوجہد میں شامل رہنے والے کانگریس قائدین کو پردیش کانگریس کی صدارت سونپنے پر زور دیا۔ کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ پارٹی میں ابھی بھی 15 تا 20 سینئر قائدین آئندہ انتخابات کیلئے اپنے آپ کو چیف منسٹر امیدوار ہونے کا تصور کرتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT