Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے ارکان اسمبلی وکونسل کے خلاف تادیبی کارروائی متوقع

کانگریس کے ارکان اسمبلی وکونسل کے خلاف تادیبی کارروائی متوقع

ٹی آر ایس سے ربط میں رہنے کا شاخسانہ ، اتم کمار کی ڈگ وجئے سنگھ سے ملاقات
حیدرآباد ۔ 13 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز) : صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی اچانک بنگلور پہونچکر اے آئی سی سی کے جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ سے ملاقات کی ۔ ٹی آر ایس سے رابطے میں رہنے والے ایک درجن کانگریس قائد بشمول ارکان اسمبلی ارکان قانون ساز کونسل کے خلاف تادیبی کارروائی کرنے پر سنجیدگی سے غور کیا جارہا ہے ۔ جس کی وجہ سے تلنگانہ پردیش کانگریس عاملہ کی تشکیل میں تاخیر کی جارہی ہے ۔ کل حیدرآباد کے دورے پر پہونچنے والے اے آئی سی سی جنرل سکریٹری و انچارج تلنگانہ کانگریس امور مسٹر ڈگ وجئے سنگھ نے پارٹی چھوڑنے والے قائدین کو دوبارہ پارٹی میں شامل نہ کرنے کا سخت اشارہ دیا تھا ۔ جس کے بعد تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے ٹی آر ایس سے رابطے میں رہنے والے قائدین اور پارٹی میں رہ کر بالواسطہ پارٹی کو نقصان پہونچانے والے قائدین کی فہرست تیار کرلی ہے جو کسی بھی وقت کانگریس سے مستعفی ہو کر ٹی آر ایس میں شامل ہوسکتے ہیں ۔ اس لیے پردیش کانگریس عاملہ کی تشکیل میں تاخیر کی جارہی ہے ۔ کون کون ٹی آر ایس سے رابطے میں اس کا باریکی سے جائزہ لیا جارہا ہے ۔ ایسے کانگریس قائدین کے خلاف کارروائی کرنے کی تیاری کی جارہی ہے ۔

باوثوق ذرائع سے یہ بھی پتہ چلا ہے کہ پردیش کانگریس قیادت ٹی آر ایس سے رابطے میں رہنے والے قائدین کو ایسا کوئی موقع دینا نہیں چاہتی کہ وہ عہدوں کو بنیاد بناکر حکمران ٹی آر ایس سے سودے بازی کرسکے ۔ ڈگ وجئے سنگھ کے حیدرآباد پہونچنے پر بند کمرے میں ہوئی بات چیت کا میڈیا میں افشاں ہوجانے کا بھی سنجیدگی سے جائزہ لے رہی ہے ۔ جس میں کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر محمد فاروق حسین نے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں پارٹی قیادت پر ٹکٹس فروخت کرنے کا الزام عائد کیا تھا پردیش کانگریس کمیٹی کی جانب سے فاروق حسین کے الزامات پر کوئی وضاحت نہیں کی گئی ہے ۔ تاہم یہ بھی سنا جارہا ہے کہ جن قائدین کے خلاف کارروائی کی جانے والی ہے اس فہرست میں مسٹر محمد فاروق حسین کا نام بھی شامل ہے ۔ فاروق حسین کی جانب سے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کی ستائش کرنے مشین کاکتیہ کے لیے اپنے ایک ماہ کی تنخواہ چیف منسٹر ریلیف فنڈ میں بطور عطیہ پیش کرنے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں ذمہ داری سونپنے کے باوجود کام نہ کرنے کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے اور بہت جلد دوسرے قائدین کے ساتھ ان کے خلاف بھی کارروائی کرنے کا امکان ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT