Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے بھروسہ یاترا پر ہریش راؤ کے ریمارک کی مذمت

کانگریس کے بھروسہ یاترا پر ہریش راؤ کے ریمارک کی مذمت

ٹی آر ایس حکومت کسانوں کی خودکشیوں کی روک تھام میں ناکام، ترجمان کانگریس کا ردعمل
حیدرآباد /16 اکتوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ پردیش کانگریس نے ہریش راؤ کی جانب سے کانگریس کی بھروسہ یاترا کو سستی شہرت کا حربہ قرار دینے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس کی سنجیدگی سے علحدہ تلنگانہ کی تشکیل ہوئی اور اس کے بعد ہریش راؤ وزیر بن سکے۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ترجمان کانگریس شرون کمار نے کہا کہ اگر حکمراں ٹی آر ایس کسانوں کو اعتماد میں لیتی تو کانگریس کو بھروسہ یاترا منظم کرنے کی ضرورت نہ پیش آتی۔ حکومت کسانوں کے خودکشی کے واقعات کو روکنے میں ناکام ہو گئی ہے، جس کی وجہ سے کانگریس کو بھروسہ یاترا منظم کرنا پڑا۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس کے نزدیک فتح اور شکست کی کوئی اہمیت نہیں ہے، اگر کانگریس پارٹی ہر معاملے کو سیاسی عینک سے دیکھتی تو علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل نہ دیتی۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے انتخابی منشور میں کئے گئے وعدوں کو 16 ماہ کے دور حکومت میں ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا گیا۔ تلنگانہ کے عوام پریشان ہیں اور ٹی آر ایس حکومت اور اس کے وزراء جشن منانے میں مصروف ہیں۔ انھوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے فرزند فلمی ہیروئن کے ساتھ تصویر کھنچانے میں سارا وقت ضائع کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ میں واٹر گرڈ کے کاموں کا آغاز نہیں ہوا اور نہ ہی کسی مقام پر کوئی نتیجہ برآمد ہوا، اس کے باوجود اتر پردیش پہنچ کر ریاستی وزیر کے ٹی آر نے چیف منسٹر اکھلیش یادو کو اس اسکیم کے بارے میں معلومات فراہم کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اگر کسی ریاست کی کوئی اسکیم کسی دوسری ریاست کو پسند آتی ہے تو اس ریاست کے چیف منسٹر، وزراء، اعلی عہدہ داروں کا وفد پہنچ کر اسکیم کے بارے میں معلومات حاصل کرتا ہے، لیکن یہ پہلا واقعہ ہے کہ سمندر خود پیاسے کے قریب پہنچا ہے۔

TOPPOPULARRECENT