Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے دس سالہ دور اقتدار میں کسان نظر انداز: بی سمن ٹی آر ایس ایم پی کا بیان

کانگریس کے دس سالہ دور اقتدار میں کسان نظر انداز: بی سمن ٹی آر ایس ایم پی کا بیان

حیدرآباد ۔  7  ستمبر  (سیاست  نیوز) ٹی آرا یس رکن پارلیمنٹ بی سمن نے الزام عائد کیا کہ کانگریس پارٹی نے 10 سالہ اقتدار کے دوران کسانوں کو نظرانداز کردیا تھا لیکن آج اپوزیشن کسانوں سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے مگرمچھ کے آنسو بہا رہی ہے۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے بی سمن نے کسانوں کے مسائل پر کانگریس قائدین کے احتجاج کو محض دکھاوا اور ڈرامہ بازی قرار دیا ۔ انہوںنے کہا کہ ایسے وقت جبکہ ٹی آر ایس حکومت نے کسانوں کے مسائل پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہے اور مختلف اسکیمات کے آغاز سے کسان مطمئن ہیں لیکن کانگریس پارٹی سیاسی مقصد براری کیلئے کسانوں کے مسائل کو سیاسی رنگ دینا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج جو کانگریس قائدین کسانوں کے حق میں احتجاج کر رہے ہیں ، انہیں عوام کو بتانا چاہئے کہ کانگریس دور حکومت میں انہوں نے کسانوں کیلئے کیا اقدامات کئے۔ انہوں نے کہا کہ آج اپوزیشن میں موجود کئی کانگریس قائدین اس وقت حکومت میں شامل تھے لیکن انہوں نے کسانوں کے مسائل پر آواز نہیں اٹھائی۔ سمن نے کہا کہ کانگریس قائدین کو کسانوں کے حق میں احتجاج کا کوئی اخلاقی حق حاصل نہیں۔ ٹی آر ایس حکومت نے اقتدار کے 17 ماہ کے اندر کسانوں کے قرض معاف کرتے ہوئے انہیں بڑی راحت پہنچائی ہے۔ انتخابی منشور میں کئے گئے وعدہ کے مطابق 17 ہزار کروڑ سے زائد کے قرض معاف کئے گئے اور کسانوں کو 400 کروڑ کی سبسیڈی فراہم کی گئی ۔ ایسے کسان جن کی فصلیں تباہ ہوگئیں انہیں مناسب امداد فراہم کی گئی۔ سمن نے الزام عائد کیا کہ دراصل کانگریس قائدین ٹی آر ایس حکومت کے اقدامات کو برداشت نہیں کر پارہے ہیں اور اپنی سیاسی بقاء کیلئے بے بنیاد الزامات کا سلسلہ جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ مشن کاکتیہ کے ذریعہ 46 ہزار سے زائد تالابوں کے تحفظ کی مہم شروع کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ جو آج کانگریس قائدین کسانوں سے ہمدردی کا اظہار کر رہے ہیں، انہوں نے اپنے اپنے اضلاع میں کسانوں کے احتجاج پر لاٹھی چارج کرایا تھا اور کسانوں کو گرفتار کیا گیا تھا۔ انہوںنے کہا کہ کانگریس پارٹی تعمیری اپوزیشن کا رول ادا کرنے میں ناکام ہوچکی ہیں۔ سمن نے کہا کہ چیف منسٹر آندھراپردیش چندرا بابو نائیڈو تلنگانہ کو برقی کے شعبہ میں نقصان پہنچانے کیلئے ہر طرح کی سازشیں کر رہے ہیں لیکن کانگریس قائدین اس پر خاموش ہیں۔ انہوں نے اپوزیشن جماعتوں کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت کے بہتر اقدامات کی تائید کریں اور تعمیری تجاویز پیش کریں۔

TOPPOPULARRECENT