Thursday , May 25 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے ذخائر آب پراجکٹس کو ٹی آر ایس کا کارنامہ قرار دینا افسوسناک

کانگریس کے ذخائر آب پراجکٹس کو ٹی آر ایس کا کارنامہ قرار دینا افسوسناک

وزیر بلدی نظم و نسق کی تقریر پر قائد اپوزیشن تلنگانہ کونسل محمد علی شبیر و دیگر کا شدید ردعمل
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر کی جانب سے آج افتتاح کیے گئے 4 ذخیرہ آب کو کانگریس کا کارنامہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان ذخیرہ آب کی تعمیرات کے لیے کانگریس دور حکومت میں 1760 کروڑ روپئے جاری کئے گئے تھے ۔ آج گاندھی بھون میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات بتائی ۔ اس موقع پر سابق مرکزی وزیر سروے ستیہ نارائنا سابق رکن اسمبلی سدھیر ریڈی بھی موجود تھے ۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ شہر میں پینے کے پانی کی قلت کو دور کرنے اور موثر سربراہی آب کو یقینی بنانے کے لیے دریائے کرشنا اور گوداوری سے حیدرآباد کو پانی حاصل کرنے کے لیے بڑے پیمانے پر عملی اقدامات کیے گئے ۔ وجئے بھاسکر ریڈی وائی ایس راج شیکھر ریڈی اور کرن کمار ریڈی کے دور حکومت میں 20 ٹی ایم سی پانی حیدرآباد لانے کے لیے اقدامات کئے گئے اور یہ کانگریس کا کارنامہ ہے ۔ مگر افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ کے ٹی آر اس کو ٹی آر ایس کا کارنامہ قرار دیتے ہوئے ریاست کے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ ان چار ذخیرہ آب کی تعمیرات کے لیے کانگریس نے 1760 کروڑ روپئے جاری کیا تھا ۔ ان ذخیرہ آب کی تعمیرات اور پائپ لائن کی تنصیب کے 90 فیصد کام مکمل ہوگئے تھے ۔ کانگریس کے دور حکومت میں ان ذخیرہ آب کی تعمیرات کے لیے جاری کردہ دستاویزات اور فنڈز کی تفصیلات میڈیا کو پیش کی گئی ۔ ان ذخیرہ آب کے لیے مرکز سے جاری کئے گئے فنڈز پر بھی روشنی ڈالی گئی ۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ کانگریس کے دور حکومت میں وہ حیدرآباد کے انچارج وزیر تھے ۔ 10 سال کے دوران گریٹر حیدرآباد کی ترقی اور تعمیری کاموں پر 2 لاکھ کروڑ روپئے خرچ کئے گئے ۔ جس میں راجیو گاندھی انٹرنیشنل ایرپورٹ ، میٹرو ٹرین ، آوٹر رنگ روڈ ، پی وی آر ایکسپریس ہائی ویز ، فلائی اوور وغیرہ شامل ہیں ۔ حیدرآباد میں جتنے بھی ترقیاتی کام ہوئے ہیں وہ کانگریس کی مرہون منت ہے ۔ لیکن ٹی آر ایس حکومت بالخصوص ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق اس کو کے سی آر کا کارنامہ قرار دے رہے ہیں جو مضحکہ خیز ہے اور کانگریس پارٹی اس کی سخت مذمت کرتی ہے ۔ جھوٹ بولنے سے قبل اپنا محاسبہ کرنے کا محمد علی شبیر نے ریاستی وزیر کے ٹی آر کو مشورہ دیا ۔ ذخیرہ آب کی تعمیرات اور گریٹر حیدرآباد کی ترقی پر مباحث کا ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کو چیلنج کیا ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT