Wednesday , September 27 2017
Home / سیاسیات / کانگریس کے 9 باغی ارکان کو اسپیکر کی نوٹس

کانگریس کے 9 باغی ارکان کو اسپیکر کی نوٹس

اترکھنڈ اسمبلی میں اکثریت پر کانگریس اور بی جے پی کے دعوے
دہرہ دون ۔ /20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اترکھنڈ کے اسپیکر گووند سنگھ کنجوال نے کانگریس کے 9 باغی ارکان کے خلاف آج نوٹس جاری کرنے اور دریافت کیا کہ اپوزیشن بی جے پی سے سازباز کے علاوہ حکمراں کانگریس کی وہپ کے خلاف ورزی پر کیوں نہ انہیں ایوان کی رکنیت سے نااہل قرار دیا جائے ۔ دہرہ دون انتظامیہ نے اتوار کو دہرہ دون کے ایک عبوری ہاسٹل میں واقع ان ارکان اسمبلی کے اپارٹمنٹس پر وجہ نمائی نوٹس چسپاں کئے ہیں ۔ اور ان باغیوں کو اندرون سات یوم جواب داخل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ۔ (9) صفحات پر مشتمل اس نوٹس میں کانگریس کے ارکان اسمبلی وجئے بہوگنا ، سبودھ اُنیال ، پردیپ بنرا ، شائیلا رانی راوت ، ہڑک سنگھ راوت ، کنور پراتاؤ ، شیلندر موہن سنگھل ، امریتا راوت اور اومیش شرما سے نکتہ بہ نکتہ وضاحت طلب کی گئی ہے ۔ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ان ارکان نے بی جے پی ارکان کے ساتھ شامل ہوکر حکومت کے خلاف نعرہ بازی کی تھی اور حکومت کی مخالفت میں شکایت کی تھی ۔ راوت حکومت جمعہ کو بحران سے دوچار ہوگئی تھی جب بی جے پی نے اقتدار پر اپنا دعوی پیش کیا تھا ۔ 70 رکنی ایوان میں کانگریس کے 36 ارکان ہیں ۔ علاوہ ازیں اس حکومت کو چھ آزاد اور دو بی ایس پی ارکان کی تائید حاصل ہے ۔ بی جے پی کے 28 ارکان ہیں جس نے کانگریس کے 9 باغیوں کی تائید کا دعویٰ کیا ہے ۔ باور کیا جاتاہے کہ کانگریس کے باغی ارکان کی سرگرمیاں دہرہ دون سے نئی دہلی منتقل ہوگئی ہیں ۔ چند ارکان نے بی جے پی قائدین سے ملاقات کی جبکہ دیگر چند ارکان کانگریس ہائی کمان سے رابطہ میں ہیں ۔ چیف منسٹر راوت نے دعویٰ کیا ہے کہ باغی ارکان تاحال کانگریس سے مستعفی نہیں ہوئے ہیں اور بی جے پی کی تائید کا دعویٰ غلط ہے ۔

TOPPOPULARRECENT