Thursday , May 25 2017
Home / شہر کی خبریں / کتاب مستطاب ’’وداعیاالی اللہ‘‘ کی محفل اجراء

کتاب مستطاب ’’وداعیاالی اللہ‘‘ کی محفل اجراء

ڈاکٹر سید محمد حمید الدین قادری شرفی اور دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 20 ۔ فروری : ( پریس نوٹ ) : رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی سیرت مقدسہ اسوئہ حسنہ اور ارشادات مبارکہ پر مبنی وقیع و جامع تالیف لطیف ’’وداعیا الی اللہ‘‘ کی بابرکت اجرائی کی تقریب جمعہ، 17 فبروری بعد نماز عشاء بمقام ’’دی ونٹیج پیالیس‘‘ مغل نگر ، کاروان روڈ، حیدرآباد نہایت ادب و احترام و احتشام کے ساتھ منعقد ہوئی۔ مولف کتاب ڈاکٹر سید محمد حمید الدین قادری شرفی ڈائریکٹر آئی ہرک و سجادہ نشین درگاہ حضرت تاج العرفاءؒ کی زیر نگرانی اس محفل کے مہمانان اعلیٰ حضرت مولانا سید شاہ محمد عبد الحفیظ قادری شرفی المعروف بہ مدنی پاشاہ ، حضرت مولانا ڈاکٹر سید شاہ محمد اسماعیل پیر حسینی قادری طاھری سجادہ نشین طاھر گلشن، کرنول اور مولانا سید شاہ محمد رفیع الدین قادری شرفی سجادہ نشین حضرت علیم شرفی نے مشترکہ طور پر رسم اجرائی انجام دی۔ پروفیسر سید محمد حسیب الدین قادری حمیدی جائنٹ ڈائریکٹر آئی ہرک نے تعارفی خطاب میں اس تالیف کے تمام اہم پہلوئو ں پر فکر انگیز روشنی ڈالی۔مولانا مفتی سید محمد سیف الدین حاکم حمیدی کامل نظامیہ نے خیر مقدم کیا۔پروفیسر حسیب الدین حمیدی نے بتایا کہ اہل علم اور عاشقان حبیب کبریاؐ نے ہر دور میں حضور پاکؐ کی محبت اور ذات اطہر سے اپنی وابستگی کے روشن نشان قائم کئے ہیں جس کا ثبوت حضورؐکے ارشادات کی اتباع اور اسوئہ حسنہ کے تمام پہلوئوں پر عمل پیرائی اور ان کی ترویج و اشاعت کے ذریعہ یادگار مثالیں قائم کی ہیں۔ ذکر رسول پاکؐ کے ذریعہ اپنے ظاہر و باطن کو روشن رکھنے کا جتن کیاہے و نیز اپنی تقریر و تحریری صلاحیتوں سے عامتہ الناس کو محبت و اتباع رسالت پناہیؐ کی راہوں پر قائم رکھنے کی امکانی سعی و کاوش کے ذریعہ سعادتوں کے حصول کا سامان کیا۔ نگران محفل نے اپنے مخصوص لب و لہجہ میں حیات طیبہ اور اسوئہ پاک سے امت محمدیہ کی وارفتگی کے موثر پہلوئوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ کی اطاعت ، فرائض کی ادائیگی، حقوق کی نگہداشت اور احکام دین کی تعمیل کا جو مومنانہ جذبہ ہے اس میں واقعتامحبت و پیرویٔ رسول اللہؐ کا فیضان جھلکتا ہے۔ڈاکٹر حمید الدین شرفی نے کتاب ’’وداعیا الی اللہ‘‘ کے متن مبارک کا جامع تذکرہ کرتے ہوئے بتایا کہ خاندان اقدس، ظہور قدسی ، میلاد پاک اور بعثت شریف اور اس کے بعد دعوت وتبلیغ کے مراحل ، حبشہ کی طرف اہل ایمان کی اولین ہجرت ، قریش کی معاندانہ سرگرمیوں ، پھر مکہ میں مراحل دعوت و تبلیغ و نیز مدینہ منورہ کی طرف ہجرت و مابعد ہجرت واقعات کا اجمالی اور موثر تذکرہ کرتے ہوئے دین حق اسلام کے پھیلائو، اثر و نفوظ اور اہل ایمان کی خداداد کامیابیوں کا احاطہ کیا۔دینی فتوحات کو اللہ تعالیٰ کا کرم خاص اور حضور اکرم ؐ کے وجود بابرکت کاتابندہ فیضان اور معجزہ بتایا۔حضرت مولانا قاضی سید شاہ اعظم علی صوفی صدر کل ہند جمعیۃ المشائخ، حضرت مولانا سید شاہ حسن ابراھیم قادری سجاد پاشاہ سجادہ نشین قادری چمن، حضرت سید شاہ نور اللہ حسینی سجادہ نشین ٹیکمال،حضرت مولانا سید نظام الدین ہارونی سجادہ نشین،مولانا سید عبد الغنی حسن پاشاہ ، ڈاکٹر مولانا سیدشاہ احمد عارف محی الدین حسینی قادری، مولانا ڈاکٹر سید شاہ محمد عبد المعز قادری شرفی، مولاناحافظ ڈاکٹر سید شاہ مرتضیٰ علی صوفی حیدر پاشاہ قادری،مولانا الحاج سید شاہ مظفر پاشاہ بخاری، مولانا حافظ سید شاہ محمد حسینی پیر قادری طاہری ،مولانا سید شاہ محمد کاظم محی الدین قادری شرفی، مولاناسید شاہ محمد عبد المعروف قادری شرفی اور دیگر مشائخ و صوفیہ کرام اور علم دوست حضرات نے شرکت کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT