Wednesday , August 16 2017
Home / پاکستان / کراچی کی امام بارگاہ میں دھماکہ، 10 افراد ہلاک ، 12 زخمی

کراچی کی امام بارگاہ میں دھماکہ، 10 افراد ہلاک ، 12 زخمی

کراچی ۔ 22 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک خودکش بم بردار نے جو برقعہ پہنے ہوئے تھا، کراچی کے دورافتادہ علاقہ چلگاری کی امام بارگاہ میں مغربین کی نماز کے وقت دھماکہ کردیا جس سے کم از کم 10 افراد ہلاک اور دیگر 12 زخمی ہوگئے۔ اس  واقعہ میں وزیرداخلہ صوبہ بلوچستان سرفراز بگتی کے بموجب 10 اور 12 سال عمر کے 6 بچے اور چند خواتین بھی مہلوکین میں شامل ہیں۔ دھماکہ کی آواز وسیع علاقہ میں سنائی دی اور قریبی عمارتوں کی کھڑکیوں کے شیشے چکناچور ہوگئے۔ فوج دھماکہ کے مقام پر پہنچ گئی اور علاقہ کا محاصرہ کرلیا۔ پولیس کے بموجب بچاؤ کارکن اور نیم طبی عہدیدار قریب میں صرف ایک طبی مرکز ہونے کی وجہ سے زخمیوں کی منتقلی میں مشکلات محسوس کررہے ہیں۔ انہیں اب سیبی منتقل کیا جارہا ہے۔ دھماکہ کی ذمہ داری تاحال کسی بھی گروپ نے قبول نہیں کی ہے۔ تاہم اس علاقہ میں شیعہ اقلیت پر سنی انتہاء پسندوں کے حملے معمول کی بات ہیں۔ مقامی انتظامیہ کے عہدیدار نے کہا کہ برقعہ پوش خودکش بم بردار 18 سال عمر کا معلوم ہوتا ہے۔ حکومت نے غیرمعمولی صیانتی انتظامات ماہر محرم کے سلسلہ میں کئے ہیں اور ہزاروں نیم فوجی رینجرس اور پولیس بڑے شہروں اور قصبوں میں تعینات کی گئی ہے تاکہ دہشت گرد حملوں کا انسداد کیا جاسکے۔ بلوچستان میں انتہاء پسندوں اور بلوچ عسکریت پسندوں کا تشدد اس علاقہ کو اکثر دہلاتا رہتا ہے۔ حالانکہ مسلکی تشدد کے انسداد کیلئے حکومت پاکستان نے تمام حساس شہروں اور قصبوں میں گزشتہ کی بہ نسبت زیادہ تعداد میں نیم فوجی فورسیس اور پولیس کا عملہ تعینات کیا تھا اس کے باوجود آج کے حملہ کو روکا نہ جاسکا ۔

TOPPOPULARRECENT