Thursday , August 17 2017
Home / جرائم و حادثات / کردار پر شبہ ، کانسٹبل نے بیوی کو قتل کردیا ،نعش کو جلاکر دفن کردینے کا انکشاف

کردار پر شبہ ، کانسٹبل نے بیوی کو قتل کردیا ،نعش کو جلاکر دفن کردینے کا انکشاف

حیدرآباد ۔ /10 ستمبر (سیاست نیوز)  بیوی کے کردار پر شبہ کرتے ہوئے ایک کانسٹبل نے اسے موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ قتل کا سنسنی خیز معاملہ آج اس وقت منظر عام پر آیا جب اسپیشل پروٹیکشن فورس سے وابستہ کانسٹبل راما کرشنا نے اپنی بیوی سپریا کا ایک ماہ قبل قتل کرنے اور اس کی نعش کو ضلع رنگاریڈی میں جلاکر دفن کرنے کا اعتراف کرلیا۔ تفصیلات کے بموجب 28 سالہ کانسٹبل کے راما کرشنا جو ریزروبینک آف انڈیا کی سکیورٹی میں تعینات تھا کی شادی قریبی رشتہ دار سپریا سے /20 اگست 2014 ء میں ہوئی تھی ۔ شادی کے بعد اپنے سسرال کو ہفتہ میں ایک مرتبہ جایا کرتا تھا ، ڈیوٹی سے دوبارہ رجوع ہونے میں دشواریاں پیش آرہی تھیں جس کے سبب اس نے جاریہ سال مارچ میں  اسٹریٹ نمبر 6 حمایت نگر علاقہ میں ایک کرایہ کا مکان حاصل کیا اور اس نے اپنے برادر نسبتی سمنت کو بھی حیدرآباد منتقل کرتے ہوئے اسے یہاں کے ایک مقامی اسکول میں نویں جماعت میں داخلہ دلوایا ۔ سپریا اکثر موبائیل فون پر کسی شخص سے بات کیا کرتی تھی جس کے سبب اس کا شوہر راماکرشنا اس کے کردار پر شبہ کرنے لگا ۔ راما کرشنا نے اپنی بیوی کو موبائیل فون کا استعمال نہ کرنے کا مشورہ دیا لیکن سپریا نے شوہر کی بات ماننے سے انکار کردیا جس کے سبب دونوں کے درمیان اکثر جھگڑا ہوا کرتا تھا ۔ بیوی کے اس رویہ سے برہم کانسٹبل راما کرشنا نے  /6 اگست کی صبح 8.30 بجے اپنے برادر نسبتی سمنت کے اسکول چلے جانے کے بعد سپریا کا تولیہ سے گلا گھونٹ کر قتل کردیا اور اپنے قریبی دوست پردیپ کو طلب کرتے ہوئے سپریا کی نعش کے تکڑے کرنے کے بعد اسے اسپورٹس بیاگ میں رکھ کر دونوں نے موٹر سائیکل پر ضلع رنگاریڈی کے وقارآباد کے جنگلاتی علاقہ میں منتقل کیا ۔ راما کرشنا اور پردیپ نے سپریا کی نعش کو پہلے پٹرول ڈال کر نذر آتش کردیا اور بعد ازاں اسے جھاڑیوں میں دفن کردیا ۔ سپریا کی ماں اور راما کرشنا نے نارائن گوڑہ پولیس اسٹیشن میں /14 اگست کو  سپریا کی گمشدگی کا ایف آئی آر درج کروایا اور ایک رکن اسمبلی کے ذریعہ گمشدگی کی تحقیقات پر دباؤ ڈالنے کی کوشش کی ۔ نارائن گوڑہ انسپکٹر مسٹر بھیم ریڈی نے گمشدہ سپریا کا پتہ لگانے کی ہرممکن کوشش کی لیکن انہیں اس سلسلے میں سراغ کی عدم دستیابی کے سبب شبہ کی بنیاد پر راما کرشنا کو اچانک کل شام حراست میں لیکر تفتیش کی جس میں حیرت انگیز انکشافات ہوئے ۔ راما کرشنا نے پولیس کو یہ بیان دیا ہے کہ اپنی بیوی کے کردار پر شبہ کرتے ہوئے اسکا قتل کردیا۔ اس بات کا پتہ چلنے پر نارائن گوڑہ پولیس کی ٹیم ملزم راما کرشنا اور اس کے ساتھی پردیپ کو حراست میں لیکر مقام واردات وقار آباد منتقل کیا جہاں پر فارنسک ماہرین کو بھی طلب کیا گیا اور جھلسی ہوئی نعش کا پوسٹ مارٹم کیا گیا ۔ اسسٹنٹ کمشنر آف پولیس عابڈس ڈیویژن مسٹر راگھویندر ریڈی نے بتایا کہ کل ملزم کانسٹبل اور اس کے ساتھی کو عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT