Tuesday , September 26 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کرناٹک میں پنچایت انتخابات کی سرگرمیاں تیز

کرناٹک میں پنچایت انتخابات کی سرگرمیاں تیز

جنرل نشستوں پر اقلیتوں کو مواقع فراہم کرنے چیف منسٹر کا تیقن

بیدر۔20؍جنوری۔( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع و تعلقہ پنچایتوں کے انتخابات میں بیدر ضلع میں جنرل نشستوں پر بھی اقلیتوں کو انتخابات میں حصہ لینے کا موقع دیا جائے گا۔یہ تیقن ریاستی وزیر اعلی سدارامیا اور اقلیتی ڈپارٹمنٹ کرناٹک پردیش کانگریس کے صدرجناب وائی سعید نے دیا ہے۔یہ بات کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ کے ضلعی صدر جناب غلام دستگیر نے بتائی ہے ۔ انھوں نے بتایا کہ کرناٹک میں منگلور کے ساتھ بیدر ضلع میں اقلیتوں کی تعداد 20فیصد سے زیادہ ہے‘لیکن ضلع و تعلقہ پنچایت انتخابات میں ضلع میں مسلم ‘عیسائی‘جین‘سکھ اور پارسی پسماندہ (A)زمرہ میں شامل ہے جن کوصرف 10نشستوں پر ریزرویشن دے کر نا انصافی کی گئی ہے۔اس ضمن میں گزشتہ دنوں وزیر اعلی اور کے پی سی سی اقلیتی ڈپارٹمنٹ کے صدر سے ملاقات کرکے یادداشت دی گئی ہے۔بیدر ضلع میں ضلع پنچایت کے 34حلقہ جات میں پسماندہ (A)زمرہ کو صرف 2نشست ریزرو رکھی گئی ہے۔پانچوں تعلقہ جات کے 131 حلقہ جات میں صرف 8نشستوں کو ریزرو رکھا گیا ہے۔ضلع پنچایت میں کمال نگر اور ہوڑگی(خاتون)‘تعلقہ پنچایت میں بیدر تعلقہ کے کمٹھانہ ‘اوراد (ایس) خاتون‘ ہمناآباد تعلقہ کے منا اکھیلی (خاتون)‘ بسواکلیان تعلقہ کے مچلم (بی) ‘بھالکی تعلقہ کے وروٹی (بی)خاتون‘تو گائوں (ایچ ) خاتون‘ اوراد تعلقہ کے دابکا (سی) خاتون‘ نشستوں کو پسماندہ (A)زمرہ کیلئے ریزرو رکھا گیا ہے۔ریاست میں اقلیتوں کو پسماندہ (A)زمرہ میں شامل کیا گیا ہے ۔سچر کمیٹی کے مطابق اقلیتوں کے ترقیاتی کاموں کے ساتھ انھیں سیاست میں زیادہ موقع دینا ضروری ہے اس لئے بیدر ضلع کو ایم ایس ڈی پی پروگرام میں شامل کیا گیا ہے‘ لیکن ضلع و تعلقہ پنچایتوں کے انتخابات میں اقلیتوں کو کچھ ہی نشستیں ریزرو رکھ کر ناانصافی کی گئی ہے ۔ اسی لئے اقلیتوں کو انصاف دینے کی اپیل کی گئی۔ جناب غلام دستگیر کی یادداشت کو قبول کرتے ہوئے وزیر اعلی اور کے پی سی سی اقلیتی ڈپارٹمنٹ صدر نے جنرل نشستوں پر اقلیتوں کو انتخابات میں موقع دینے کا تیقن دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT