Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / کرنسی بحران کی برقراری افسوسناک

کرنسی بحران کی برقراری افسوسناک

د28د ن بعد بھی عوام کو کوئی راحت نہیں ، چندرا بابو نائیڈو
حیدرآباد ۔ 6 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ ایک ہزار و پانچ سو روپئے کے بڑے کرنسی نوٹوں کے منسوخ ہوئے 28 یوم گزر جانے کے باوجود کرنسی نوٹوں کے بحران کی یکسوئی نہیں ہوسکی لیکن ہر جگہ بڑھتے ہوئے عوامی دباؤ میں ممکنہ حد تک کمی کی جاسکی ۔ ریاست آندھرا پردیش کے بینکرس و محکمہ فینانس کے اعلی عہدیداروں کے ساتھ ٹیلی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ کرنسی نوٹوں کی منسوخی ایک انتہائی حساس مسئلہ و موضوع ہے ۔ بالخصوص تمام طبقات و فنی لحاظ سے تعلق رکھنے والا موضوع و مسئلہ ہے ۔ چیف منسٹر آندھرا پردیش نے ریاست کے عوام کو مشورہ دیا کہ وہ نقد رقومات کے استعمال میں کمی کرنے ، ٹکنالوجی سے بھر پور استفادہ کرنے اور ضرورت کے مطابق ہی نقد رقومات کا استعمال کیا جانا چاہئے ۔ علاوہ ازیں نقد رقومات کا استعمال ، پاس مشینس کا استعمال ، آن لائن لین دین وغیرہ پر توجہ دی جانی چاہئے ۔ چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ کل ریاست کو مزید 1,100 کرور روپئے حاصل ہوں گے اور ساتھ ہی ساتھ 20 روپئے اور 50 روپئے کے کرنسی نوٹس بھی ریاست آندھرا پردیش کو حاصل ہوں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ گذشتہ دن ریاست کو 2400 کروڑ روپئے حاصل ہونے کی وجہ سے کافی حد تک راحت حاصل ہوئی ہے ۔ چیف منسٹر نے کسانوں کو مشورہ دیا کہ وہ تخم ، کھاد اور جراثیم کش ادویات کی خریدی آن لائن کریں اور مزدوروں ورکروں کو نقد رقم حاصل ہوئے جیسے احتیاطی اقدامات کرنے کی بینکروں کو ضروری ہدایات دیں اور بس اسٹانڈز ریلوے اسٹیشنوں میں بزنس کرسپانڈنٹس کو تعینات کر کے مسافروں کو نقد رقومات کی مشکلات پیش نہ آنے پر خصوصی توجہ دینے پر چیف منسٹر نے زور دیا اور کہا کہ عوام میں بینکرس کے تعلق سے بھر پور اعتماد کو فروغ دینے کے اقدامات کرنے کا بھی بینکروں کو مشورہ دیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT