Thursday , June 29 2017
Home / سیاسیات / کرنسی بند کرنے سے نراج کی کیفیت ‘ بینک یونینس

کرنسی بند کرنے سے نراج کی کیفیت ‘ بینک یونینس

ودودرہ 14 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) دو بڑی بینک یونینوں نے 500 اور 1000 روپئے کی کرنسی نوٹوں کا چلن بند کرنے حکومت کے فیصلے پر تنقید کی ہے اور کہا کہ اس کے نتیجہ میں معاشی نراج کی کیفیت پیدا ہوگئی ہے ۔ انڈین بینکس اسوسی ایشن کے نام ایک مکتوب میں آل انڈیا بینک آفیسرس اسوسی ایشن اور آل انڈیا بینک ائمپلائز اسوسی ایشن نے کہا کہ بڑے کرنسی نوٹوں کا چلن بند کرنے کا فیصلہ کسی مناسب منصوبہ بندی اور تیاری کے بغیر کیا گیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ کرنسی نوٹوں کا چلن بند کرنے اور ان کو بدلنے کے اعلان کے بعد ملک بھر کی تمام بینک برانچس پر ملازمین اور عہدیداروں کے کام کا بوجھ بھی بڑھ گیا ہے ۔ جنرل سکریٹری آل انڈیا بینک آفیسرس اسوسی ایشن سی ناگراجن اور آل انڈیا بینک ائمپلائز اسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری سی ایچ وینکٹ چلم نے اپنے مکتوب میں کہا کہ ملک بھر کی بینک برانچس پر نراج کی کیفیت پیدا ہو رہی ہے اور یہ صورتحال صارفین اور بینک ملازمین و عہدیداروں دونوں کیلئے ناقابل برداشت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 100 روپئے کی نوٹوں کی مانگ بڑھ گئی ہے اور اب یہ بہت زیادہ طلب کی جا رہی ہے ۔ بیشتر صارفین 2000 روپئے کی نئی نوٹ قبول کرنے تیار نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بڑے کرنسی نوٹ بند کرنے کی وجہ کسی کی سمجھ میں نہیں آتی ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT