Monday , June 26 2017
Home / شہر کی خبریں / کرنسی نوٹس کی تنسیخ پر چیف منسٹر تلنگانہ کی خاموشی پر شک

کرنسی نوٹس کی تنسیخ پر چیف منسٹر تلنگانہ کی خاموشی پر شک

غریب عوام پر مرکزی حکومت کی سرجیکل اسٹرائیک ، محمد علی شبیر قائد اپوزیشن تلنگانہ کونسل کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 17 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے ملک کے غریب عوام پر سرجیکل اسٹرائیک کرتے ہوئے پارلیمنٹ سے راہ فرار اختیار کرنے کا وزیراعظم نریندر مودی پر الزام عائد کیا ۔ بڑے نوٹوں کی منسوخی کے بعد چیف منسٹر تلنگانہ کی خاموشی پر شکوک کا اظہار کرتے ہوئے دال میں کچھ کالا ہونے کا الزام عائد کیا ۔ کے ٹی آر اور کویتا کے بیرونی ممالک کے دوروں پر خدشات کا اظہار کیا ۔ آج اسمبلی کے میڈیا کانفرنس ہال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد علی شبیر نے کہا کہ متبادل انتظامات کیے بغیر عجلت میں 500 اور 1000 کی نوٹوں کو منسوخ کرتے ہوئے وزیراعظم نے جراتمندانہ فیصلہ کرنے کا دعویٰ کیا تھا ۔ پارلیمنٹ سرمائی سیشن کے دوسرے دن بھی وزیراعظم نریندر مودی ایوان میں نہیں پہونچے اور نہ ہی اپوزیشن کا سامنا کرنے کی جرات کی ہے ۔ اپوزیشن جماعتیں پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں گذشتہ دو دن سے عوامی مسائل کو پیش کررہے ہیں مگر افسوس کی بات ہے ملک کے وزیراعظم ایوان میں موجود نہیں ہے ۔ اس سے اندازہ ہوتا ہے انہیں غریب عوام اور ان کے مسائل سے کتنی دلچسپی ہے ۔ قائد اپوزیشن نے کہا کہ بڑے نوٹوں کی منسوخی سے تلنگانہ میں 7 افراد فوت ہوگئے ہیں ۔ آخری رسومات انجام دینے کے لیے بھی ان کے ارکان خاندان کے پاس پیسوں کی مشکلات تھی ۔ سارے ملک میں 30 افراد فوت ہوئے ہیں ۔ بڑے نوٹوں کی منسوخی کا ریاست کے سرکاری خزانے پر کافی اثر پڑا ہے ۔ سرکاری ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی بھی مشکل نظر آرہی ہے ۔ اتنے سنگین معاشی مسائل پر چیف منسٹر کی خاموشی معنی خیز ہے ۔ جس سے کئی خدشات پیدا ہورہے ہیں ۔ ایسا لگتا ہے وزیراعظم نریندر مودی نے چیف منسٹر تلنگانہ کو بہت پہلے اس کی اطلاع دے دی تھی ۔ جس کی وجہ سے کے سی آر غریب عوام کی اموات اور مشکلات کو نظر انداز کررہے ہیں اور ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ کو پارلیمنٹ میں احتجاج درج کرانے سے بھی روک دیا گیا ہے ۔ ٹی آر ایس اور بی جے پی کی آپسی ملی بھگت سے بڑے نوٹوں کے چلن کو بند کردیا گیا ہے ۔ بی جے پی اور ٹی آر ایس کے قائدین مطمئن ہیں ۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ چیف منسٹر کے فرزند ریاستی وزیر آئی ٹی و بلدی نظم و نسق کے ٹی آر اور ان کی دختر رکن پارلیمنٹ کویتا کے بیرونی دورے پر عوام کو شکوک ہے کہ کالا دھن کو باقاعدہ بنانے کے لیے دونوں بھائی بہن نے بیرونی ممالک کے دورے کیے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ بنکوں کو نقصان پہونچانے والوں کے قرض معاف کئے جارہے ہیں اور خون پسینہ سے کمانے والے غریب عوام کو قطاروں میں کھڑا کیا گیا ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT