Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / کرپشن کے خلاف جنگ ، خانگی اسکولس اور ہاسپٹلس کے خلاف کارروائی

کرپشن کے خلاف جنگ ، خانگی اسکولس اور ہاسپٹلس کے خلاف کارروائی

تمام طبقات کی یکساں ترقی کو یقینی بنانے اقدامات ، ٹی آر ایس کے پلینری کا اختتام ، چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کا خطاب
حیدرآباد۔21 اپریل (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کرپشن کے خلاف اعلان جنگ کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ ریاست کو کرپشن سے پاک کرنے کے لیے ان کی حکومت پابند عہد ہے۔ انہوں نے خانگی دواخانوں اور خانگی اسکولوں کی بے قاعدگیوں اور جبری اصولی کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا بھی اعلان کیا۔ ٹی آر ایس کے 16 ویں پلینری سیشن سے اختتامی خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر کے چندر شیھکر رائو نے کہا کہ ٹی آر ایس جدوجہد کے جذبہ سے بھرپور پارٹی ہے۔ لہٰذا وہ تلنگانہ کو کرپشن سے پاک کرنے کے لیے جدوجہد کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکمرانی میں کرپشن کے لیے کوئی گنجائش نہیں ہے اور وہ اس طرح کی کسی بھی سرگرمیوں کو سختی سے کچل دیں گے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ کرپشن سے پاک سماج کی تشکیل کے ذریعہ عوام کی بہتر طور پر خدمت کی جاسکتی ہے۔ سرکاری اسکیمات پر موثر عمل آوری ممکن ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ سرکاری محکمہ جات پر اگر الزامات عائد کیئے جائیں تو متعلقہ وزراء کو ہدایت دی گئی کہ وہ الزام عائد کرنے والوں کے خلاف مقدمات درج کریں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے عوام کو صدفیصد بہتر خدمات کی فراہمی تک یہ جدوجہد جاری رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں فلاحی اسکیمات پر عمل آوری کا کابینہ کے اجلاس میں جائزہ لیا جائے گا اور مناسب فیصلے ہوں گے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ان کی حکومت عوام کی بھلائی کے لیے وقف ہوچکی ہے اور ہر شعبہ میں بہتر خدمات کے ذریعہ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل ان کا اہم مقصد ہے۔ چیف منسٹر نے خانگی دواخانوں اور اسکولوں کے بارے میں شکایات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کی سرگرمیوں پر روک لگانا ناگزیر ہے۔ انہوں نے بتایا کہ کابینہ کے اجلاس میں اس سلسلہ میں جائزہ لیا جائے گا اور مناسب حکمت عملی تیار کی جائے گی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ خانگی دواخانے اور اسکولس من مانی رقومات حاصل کرتے ہوئے عوام کو پریشانی میں مبتلا کررہے ہیں۔ ان کا مقصد عوام کی خدمت سے زیادہ رقومات کا حصول ہے۔ لہٰذا حکومت ان سرگرمیوں پر روک لگانے کے لیے ضروری اقدامات کرے گی۔ چیف منسٹر نے زرعی شعبہ اور بالخصوص کسانوں کی بھلائی کے لیے حکومت کے اقدامات کا حوالہ دیا اور کہا کہ ان کی حکمرانی میں کسان راجہ کی طرح رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کو نقلی بیج سربراہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ نقلی بیج اور کھاد کے سبب کسانوں کو جو نقصان پہنچے گا اس کی پابجائی متعلقہ کمپنی سے حاصل کرنے کے لیے قانون سازی کی جائے گی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ورنگل میں 27 اپریل کے جلسہ عام کے بعد اسمبلی کا خصوصی اجلاس طلب کیا جائے گا اور نقلی بیج کی سربراہی کے مسئلہ پر غور ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ ابھی تک حکومت کی جانب سے 4 ایسے تاجروں کے خلاف کارروائی کی گئی ہے جنہوں نے نقلی بیج فروخت کیئے تھے۔ وزیر زراعت پوچارم سرینواس ریڈی نے ان کے خلاف پی ڈی ایکٹ کا استعمال کیا ہے۔ یہ چاروں تاجر ابھی بھی جیل میں ہیں۔ لہٰذا دیگر تاجروں کو اس طرح کی سرگرمیوں سے دور رہنا چاہئے۔ کے سی آر نے ایس سی ایس ٹی طبقات کے لیے اقامتی اسکولس کے قیام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ( باقی سلسلہ صفحہ 7 پر )

Top Stories

TOPPOPULARRECENT