Wednesday , October 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کریم نگر میں ریت کی نکاسی کیلئے منصوبہ بندی

کریم نگر میں ریت کی نکاسی کیلئے منصوبہ بندی

کریم نگر /8 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع کریم نگر میں رین کے کافی ذخائر میں مزید تین مقامات پر ذخائر کی نشاندہی کی گئی ہے اور ریت کی نکاسی کیلئے حکومت کی جانب سے منصوبہ بندی کی جارہی ہے ۔ اس سلسلہ میں کوذی انوپورم کے قریب برے پیمانے پر ریت نکالنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ یہاں 53 لاکھ کیوبک میٹر ریت کے ذخیرہ کا اندازہ لگایا گیا ہے ۔ تقریباً گیارہ کیلومیٹر کے فاصلے تک ریت کے ذخیرہ کی نشاندہی کی گئی ہے ۔ جسے مارچ سے فروخت کئے جانے کا منصوبہ بنایا جارہا ہے ۔ مہادیوپور کے علاقہ میں گوداوری ندی پر دو الگ الگ مقامات پر تیت کے ذخیرہ کی نشاندہی کی گئی ہے ۔ جہاں 40 لاکھ کیوبک میٹر ریت حاصل ہونے کا اندیشہ ہے مذکورہ ریت کے ذخائر سے حکومت کو سالانہ 400 کروڑ روپیوں کی آمدنی ہوگی جب کہ سال گذشتہ ریت کے تین ذخائر سے تا حال 40 کروڑ روپیوں کی آمدنی ہوچکی ہے ۔ نئے ریت کے ذخائر کی ذمہ داری بھی معدنیات ویلفیر سوسائٹی کے زیر نگرانی ہوگی ۔ ریت کی منتقلی سخت نگرانی میں ہو رہی ہے جس کی وجہ بدعنوانیوں کی گنجائش ہی نہیں ہے ۔ معدنیات ویلفیر سوسائٹی بھی ریت کی منتقلی پر نظر رکھے ہوئے ہے ۔ زائد لوڈکی حوصلہ افزائی نہیں کی جارہی ہے ۔ ریاستی معدنیات ویلفیر آفس کریم نگر اور عادل آباد ضلعوں کے پی ڈی ودیا ساگر کو بھی اس تعلق سے واقف کروایا گیا ہے کہ ریت کی کافی مانگ ہے ۔ تعمیری ضروریات کیغرض سے ریاست میں ریت کی مانگ میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ بالخصوص حیدرآباد کو ریت کافی پیمانے پر بھجوائی جارہی ہے ۔ روزآنہ 600 لاریاں بھر کر ریت حیدرآباد سربراہ کی جاتی ہے ۔ پہلا ریت کا ذخیرہ قاضی پور سال گذشتہ 12 فروری کو حاصل ہوا ۔ جس سے 28.6 کیوبک میٹر ریت حاصل ہونے کا اندیشہ لگایا گیا ۔ آرے پلی کے قریب 5.25 لاکھ کیوبک 46741 ریت لاریوں کے ذریعہ فروخت کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT