Thursday , June 29 2017
Home / شہر کی خبریں / کسانوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک کی مذمت

کسانوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک کی مذمت

مقدمات سے غیر مشروط دستبرداری کا مطالبہ ، کانگریس وفد کی گورنر سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 12 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے ایک وفد نے راج بھون پہونچکر گورنر سے ملاقات کی ۔ کسانوں کے خلاف پولیس کے غیر انسانی سلوک کی مذمت کرتے ہوئے عائد کردہ تمام مقدمات سے غیر مشروط دستبرداری اختیار کرنے کا مطالبہ کیا ۔ گورنر سے ملاقات کرنے والوں میں صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر سابق وزراء پنالہ لکشمیا ، ڈاکٹر جے گیتا ریڈی ، سابق اسپیکر کے آر سریش ریڈی صدر تلنگانہ مہیلا کانگریس این شاردا کے علاوہ دوسرے قائدین شامل تھے ۔ گورنر کو یادداشت پیش کرنے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کھمم واقعہ کے بعد کسانوں کے خلاف دائر کردہ مقدمات سے فوری دستبرداری اختیار کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا ۔ حکومت پر غیر دستوری عمل کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ گورنر سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ چیف منسٹر کے سی آر کو مارکٹ یارڈ کا دورہ کرنے کا مشورہ دیں ۔ کسانوں کی پریشانی میں ردعمل کا اظہار کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے ۔ اپنے حقوق کے لیے جدوجہد کرنے والے کسانوں کے خلاف مجرمانہ مقدمات درج کرنے کی سخت مذمت کی ۔ گورنر کو دئیے گئے میمورنڈم میں بتایا گیا کہ چیف منسٹر غریب کسانوں کے مفادات کے خلاف کام کررہے ہیں ۔ تلنگانہ حکومت زرعی شعبہ کو یکسر نظر انداز کررہی ہے ۔ جس کی وجہ سے گذشتہ تین سال کے دوران ریاست میں 3 ہزار کسانوں نے خود کشی کی ہے ۔ مگر چیف منسٹر نے خود کشی کرنے والے کسانوں کے ارکان خاندان سے ملاقات کرنا بھی گوارا نہیں کیا ۔ جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے ۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے کھمم واقعہ کے کسانوں کو ہتھکڑیاں پہنا کر عدالت میں پیش کرنے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کسان کوئی دہشت گرد نہیں ہے یا ان پر غنڈہ گردی کے ماضی میں کوئی مقدمات درج نہیں ہے ۔ باوجود اس کے پولیس نے جوش و خروش کا مظاہرہ کرتے ہوئے کسانوں کی توہین کی ہے ۔ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر فوری ریاست کے کسانوں سے معذرت خواہی کریں ۔ کسانوں کے خلاف عائد کردہ مقدمات سے فوری دستبرداری اختیار کریں ۔ بصورت دیگر کانگریس پارٹی اپنے احتجاج میں مزید شدت پیدا کرے گی ۔ اس کے جو بھی اثرات مرتب ہوں گے ۔ اس کی راست ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی ۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ مرچ کے علاوہ تلنگانہ میں دوسری فصلوں کو اقل ترین قیمت وصول نہیں ہورہی ہے ۔ کسان مرچ کو نذر آتش کررہے ہیں ۔ انصاف کے لیے احتجاج کررہے ہیں ۔ چیف منسٹر مصیبت کے موقع پر کسانوں کو راحت فراہم کرنے کے بجائے کانگریس کے بشمول دوسری اپوزیشن جماعتوں پر کسانوں کو حکومت کے خلاف مشتعل کرنے کا الزام عائد کررہے ہیں ۔ حکومت کسانوں کے مسائل کو نظر انداز کررہی ہے ۔ کم از کم گورنر اس پر توجہ دیں ۔ چیف منسٹر اور وزراء کو مارکٹ یارڈس کا دورہ کرنے کی ہدایت دیں تاکہ کسانوں کو نقصانات سے بچایا جاسکے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT