Wednesday , July 26 2017
Home / شہر کی خبریں / کسانوں کے مسائل پر گورنر مداخلت کریں

کسانوں کے مسائل پر گورنر مداخلت کریں

حالات انتہائی ابتر ۔ کانگریس وفد کی ای ایس ایل نرسمہن سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 15 جولائی (سیاست نیوز) تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے ایک وفد نے آج راج بھون پہنچ کر گورنر نرسمہن کو یادداشت پیش کرکے کسانوں سے انصاف کرنے مداخلت کی اپیل کی۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کیپٹن اتم کمار ریڈی کی قیادت میں کانگریس کا ایک وفد جس میں قائدین اپوزیشن کے جاناریڈی (اسمبلی)، محمد علی شبیر (کونسل)، سابق صدر پردیش کانگریس پنالہ لکشمیا صدرنشین کسان کھیت مزدور کانگریس ایم کودنڈا ریڈی، سابق وزرا جے گیتاریڈی، جی چناریڈی، ڈی کے ارونا، ڈی ناگیندر، ڈپٹی فلور لیڈر کونسل پی سدھاکر ریڈی، سابق مرکزی وزیر بلرام نائیک شامل تھے۔ اتم کمار ریڈی نے گورنر کو بتایا کہ خریف سیزن کیلئے کسانوں کے پاس پیسے نہیں ہے اور نہ ہی بینکوں سے انہیں قرض جاری کئے جارہے ہیں۔ سود کی عدم ادائیگی سے حکومت نے کسانوں کا جو قرض معاف کیا ہے وہ کارآمد ثابت نہیں ہورہا ہے۔ بینکوں کی جانب سے قرضوں کی عدم اجرائی پر کسان خانگی مالیاتی اداروں سے رجوع ہورہے ہیں یا مالی مسائل کے باعث خودکشی کررہے ہیں۔ اس مسئلہ پر گورنر کو مداخلت کرنا چاہئے۔ بعدازاں پریس کانفرنس میں کانگریس قائدین نے بتایا کہ کسانوں سے دھان کی خریدی کے بعد رقم بینکوں میں جمع ہوگئی ہے۔ تاہم بینکوں کی جانب سے کسانوں کو رقم نکالنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جس کی دوسری وجہ یہ بھی ہیکہ بینکوں میں رقم نہیں ہے۔ خریف سیزن میں سرمایہ کاری کیلئے کسانوں کو فنڈز کی ضرورت ہے لیکن بینکوں کی سردمہری کے باعث کسان خانگی مالیاتی اداروں سے قرض حاصل کرنے کیلئے مجبور ہورہے ہیں جس سے ان پر دوبارہ قرض کا بوجھ عائد ہورہا ہے۔ بینکوں میں فنڈز کی قلت سے ایک طرف کسان دوسری طرف مزدور پریشان ہیں۔ حکومت کی جانب سے قرض معافی اسکیم مکمل ہوجانے کا دعویٰ کیا جارہا ہے مگر یہ اسکیم کسانوں کیلئے فائدہ مند ثابت نہیں ہوئی ہے۔ حکومت کی پالیسی میں خامیاں ہونے کی وجہ سے کسان بینکوں میں رکھے گئے اپنے پٹہ پاس بکس کے علاوہ دوسرے دستاویزات وغیرہ حاصل کرنے میں ناکام ہورہے ہیں۔

 

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT